آئی جی کا تبادلہ بلدیاتی انتخابات میں قبل ازوقت دھاندلی ہے ، فردوس شمیم نقوی

139

فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ آئی جی سندھ کا تبادلہ بلدیاتی انتخابات میں قبل ازوقت دھاندلی کے مترادف ہے ۔

سندھ حکومت کی جانب سے آئی جی سندھ کو ہٹانے کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے سندھ میں قائد حزب اختلاف فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات قریب آرہے ہیں ، جس طرح ماضی میں پولیس افسران اور ڈپٹی کمشنرز کے ساتھ مل کر انتخابات میں دھاندلی کرائی جاتی تھی، آئی جی سندھ کا  تبادلہ بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے۔

فردوس شمیم نقوی کا کہنا ہےکہ گورنر سندھ اور وزیراعظم کے درمیان آئی جی سندھ کو ہٹانے کا معاملہ زیر بحث آیا ہے ،سندھ  حکومت انتقامی کارروائی کررہی ہے، ہم نے گورنر سندھ سے آئی جی کے معاملے پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ آئی جی سندھ کو اپنے دفاع کا اختیار ہونا چاہیے، انہوں نے کہا کہ آئی جی کے لیے ناموں کی تجویز وفاقی حکومت کرتی ہے اور آئی جی کی تقرری کا حق وزیراعظم کو حاصل ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ صوبے کے حالات اچھے نہیں ہیں، سندھ حکومت نے پولیس کے ساتھ جو رویہ اختیار کیا ہے اس کی وجہ سے لاقانیت میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ایک سوال کے جواب فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ آئی جی پنجاب کے معاملے پر صوبے  اور وفاق کے درمیان ایک رائے تھی جس کے بعد تبادلہ ہوا۔