دعا منگی کا اغواء 3 افراد زیر حراست سابق منگیتر سے بھی تفتیش ہوگی

93

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پولیس نے دعا منگی کے اغوا کے شبہے میں3افراد کو حراست میں لے لیا ،دعامنگی کے سابق منگیتر سمیت 22افراد کو تفتیش کیلیے طلب کیا جائے گا، اغوا کے وقت مغویہ کی بہن کی بھی موقع پر موجود تھی، پولیس تاوان وصولی کے پہلو پر بھی تحقیقات کر رہی ہے، پولیس کو واقعے کی اطلاع رکشا ڈرائیور نے دی،مغویہ قانون کی طالبہ تھی ، اپنے دوستوں کے ساتھ اکثر ماسٹر چائے نامی ہو ٹل پر بیٹھتی تھی۔ تفصیلات کے مطابق ڈیفنس میں ہفتے کی شب کار سوار ملزمان ایک نوجوان کو گولی مار کر اس کے ساتھ موجود لڑکی کو اغوا کر کے فرار ہو گئے تھے،قانون کی طالبہ دعا منگی کے اغوا کے سلسلے میں پولیس نے ان کے گروپ کے لڑکے لڑکیوں سمیت 22 افراد کے بیانات ریکارڈ کرلیے ہیں۔پولیس کے مطابق ملنے والی اہم معلومات سے تفتیش تیزی سے آگے بڑھ رہی ہے جب کہ تفتیشی ٹیم نے بڑا بخاری میں واقع ہوٹل’’ماسٹر چائے‘‘ کو اس اہم کیس کیلیے مرکز تفتیش بنا لیا ہے۔یاد رہے کہ ڈیفنس فیز 6 کے علاقے بڑا بخاری اور اطراف میں اس طرح کے ہوٹل نوعمر لڑکے لڑکیوں کی بیٹھک بن چکے ہیں۔پولیس ذرائع کے مطابق ماسٹر چائے کے تمام ویٹرز، سیکورٹی گارڈ اور دیگر ملازمین سمیت دیگر افراد کے بیانات ریکارڈ کیے گئے ہیں۔اس سلسلے میں ایک اور انکشاف ہوا ہے کہ واردات کے وقت دعا کی بڑی بہن بھی اسی ہوٹل پر اپنے دوست کے ساتھ موجود تھی۔بہن کے مطابق دعا اور حارث بات چیت کرنے کے لیے اٹھ کر ٹہلنے لگے کہ گولی چلنے کی آواز آئی۔بیانات سے یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ مغوی دعا منگی کئی ماہ سے وقفے وقفے سے دوستوں کے ساتھ ماسٹر چائے پر آکر بیٹھتی تھی تاہم گزشتہ چار، پانچ دن سے وہ مسلسل اور طویل دورانیہ کے لیے بیٹھک کر رہی تھی۔اس بیٹھک کے 3 لڑکوں کو بھی پولیس نے بیانات کے بعد مزید تفتیشی مدد کے لیے روک لیا ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق واقعے سے پہلے اور بعد میں علاقے کی سی سی ٹی وی فوٹیجز میں نظر آنے والی ملزمان کی کار جیسی ایک مشکوک گاڑی بھی پکڑلی گئی ہے، تاہم اس حوالے سے مزید تفتیش جاری ہے۔دوسری جانب تفتیشی ٹیم تاوان وصولی کے پہلو پر بھی تفتیش کر رہی ہے جب کہ امریکا میں تعلیم کے حصول کے دوران ایک نوجوان کی جانب سے جبری شادی کی کوشش اور بلیک میلنگ کا معاملہ بھی پولیس نے تفتیش میں شامل کرلیا ہے۔پولیس کے تفتیشی ذرائع کے مطابق کراچی کی مقامی لا یونیورسٹی میں فاؤنڈیشن کی طالبہ دْعا منگی نے اپنے حلقہ احباب میں خود کو امیرزادی اور ڈیفنس کے بڑے بنگلے کی رہائشی ظاہر کر رکھا تھا۔ڈیفنس فیز 6 میں بڑا بخاری کے ہوٹل کے باہر سے اغوا کے بعد حقائق سامنے آنے پر دعا منگی کے کورنگی کراسنگ پر رہنے کے انکشاف پر اس کے ساتھی حیرت زدہ ہیں۔پولیس حکام کے مطابق دعا منگی کی جانب سے عام کیے گئے رئیس زادی کے تاثر سے اس کے تاوان کی غرض سے اغوا کیے جانے کے پہلو پر بھی تفتیش کی جارہی ہے۔