جرمنی میں ‘را’ کے مبینہ ایجنٹس کا ٹرائل شروع

252

برلن: جرمنی میں بھارتی خفیہ ایجنسی ‘را’ کے مبینہ ایجنٹس کا ٹرائل شروع کردیا گیا۔

غیر ملکی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ  جرمنی میں مقیم دو بھارتی میاں بیوی بھارتی خفیہ ایجنسی ‘را’کے لیے کام کرتے ہیں  جو جرمنی میں موجود سکھ اپوزيشن اور کشمیری علیحدگی پسندوں کی جاسوسی میں ملوث ہیں ان میں  50 سالہ منموہن اور اس کی  51 سالہ بیوی کنول جيت شامل ہیں ۔

جرمن میڈیا کا کہنا ہے کہ منموہن نے جنوری 2015 ميں را کیلئے جاسوسی شروع کی جبکہ ان کی اہلیہ کنول جيت نے جولائی 2017 میں را کیلئے کام کا آغاز کیا ۔الزامات ثابت ہونے پر بھارتی جوڑے کو 10 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔ سکھ اپوزيشن اور کشمیری علیحدگی پسندوں کی معلومات کے بدلے منموہن اور اس کی بیوی نے’را’سے تقریباً 8 ہزار امریکی ڈالر لیے۔

یاد رہے کہ بھارتی شہری منموہن جرمنی میں بھارتی قونصلیٹ میں تعینات تھا۔ جرمنی ميں غیرملکیوں کی جانب سے جرمن شہریوں کی جاسوسی سنگين جرم جس کی سزا موت ہے۔