نیب نے مفرور بابر غوری کیخلاف ایک اور مقدمے کی انکوائری شروع کردی

34

کراچی (اسٹاف رپورٹر) نیب نے متحدہ قومی موومنٹ کے مفرور رہنما بابر غوری کے خلاف گھیرا تنگ کرتے ہوئے ایک اور انکوائری شروع کردی۔ تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو نے پورٹ قاسم اتھارٹی میں غیر قانونی بھرتیوں کی تحقیقات تیز کردی ہیں۔ نیب نے اس سلسلے میں پورٹ قاسم اتھارٹی سے 2008ء میں ہونے والی بھرتیوں کا ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ بابر غوری نے اپنے دور میں 870 غیر قانونی بھرتیاں کیں، اس کے علاوہ انہوں نے من پسند افسران کو گریڈ 19 اور 20 میں ترقیاں بھی دیں۔ واضح رہے کہ سابق وزیر بابر غوری کے خلاف ایک نیب ریفرنس پہلے سے زیر سماعت ہے، جس میں انہیں مفرور قرار دیا گیا ہے۔ پچھلے برس بابر غوری و دیگر کے خلاف 3 ارب روپے سے زائد کی کرپشن کے الزام کے تحت نیب کی جانب سے دائر کیا گیا ریفرنس احتساب عدالت نے سماعت کے لیے منظور کر لیا تھا اور ایم کیو ایم رہنما کے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری بھی جاری کر دیے تھے۔ ملزمان پر 2012ء میں کراچی پورٹ ٹرسٹ میں 940 غیر قانونی بھرتیوں کا الزام تھا، جس سے قومی خزانے کو 2 ارب 88 کروڑ 55 لاکھ کا نقصان پہنچا تھا۔