اپنے محسنوں کو یاد رکھ کر ہی قومیں زندہ رہتی ہیں،رضی حیدر

151
شہید ملت لیاقت علی خانؒ کی برسی کے سلسلے میں مذاکرے میں آغا مسعود حسین ،خواجہ رضی حیدرو دیگر اظہار خیال کر رہے ہیں
شہید ملت لیاقت علی خانؒ کی برسی کے سلسلے میں مذاکرے میں آغا مسعود حسین ،خواجہ رضی حیدرو دیگر اظہار خیال کر رہے ہیں

کراچی (پ ر) ہمیں پاکستان کی تعمیر و ترقی کیلیے شہید ملت کے طرز حکمرانی کو اپنانا ہوگا۔ اپنی خارجہ پالیسی اور معیشت کو ان خطوط پر استوار کرنا ہوگا، جن پر شہید ملت نے کیا تھا۔ وہ پاکستان کے بارے میں ایک وژن رکھتے تھے۔ یہ بات تجزیہ کار آغا مسعود حسین نے شہید ملت لیاقت علی خانؒ کی 68 ویں برسی کے سلسلے میں قائداعظمؒ اکادمی میں منعقدہ مذاکرے سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اکادمی کے ڈائریکٹر، میزبان خواجہ رضی حیدر نے کہا کہ قائداعظمؒ کے بعد سب سے زیادہ خدمات آپ نے انجام دیں، وہ تحریک پاکستان کے بنیادی رہنما اور قائداعظمؒ کے دست راست تھے، اگر وہ کچھ دن اور زندہ رہتے، تو آج پاکستان ایک ترقی یافتہ ملک کے طور پر منظر پر موجود ہوتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں اپنے محسنوں کو یاد رکھنا چاہیے۔ زندہ قومیں اپنے محسنوں کی یاد سے ہی زندہ رہتی ہیں۔ شہید ملت نے مسلم لیگ کی تنظیم نو کی اور اقلیتوں کے تحفظ کیلیے جو اقدامات کیے وہ مثالی ہیں۔ ہمیں شہید ملت کی تاریخ نئی نسل کو منتقل کرنے کی ضرورت ہے۔ معروف دانشور نذیر احمد چنہ نے کہا کہ شہید ملت ہماری تاریخ کا وہ روشن ستارہ ہیں۔ جو تاریخ میں ہمیشہ جگمگاتا رہے گا۔مذاکرے سے معروف دانشور و سماجی رہنما محفوظ النبی خان نے بھی خطاب کیا۔