پی آئی اے میں مشرف رسول کا بطور چیف ایگزیکٹو تقرر غیرقانونی قرار

42

اسلام آباد (اے پی پی) عدالت عظمیٰ نے پی آئی اے میں مشرف رسول کا بطور چیف ایگزیکٹو تقرر غیرقانونی قرار دیدیا۔ کیس کا تحریری فیصلہ جاری کر تے ہوئے عدالت نے قرار دیا ہے کہ مشرف رسول کے تقرر میں رولز اینڈ ریگولیشن کو نظر انداز کیا گیا ہے‘ مشرف رسول کے تقرر میں بورڈ آف ڈائریکٹر کا کردار ربڑ اسٹمپ کا تھا، مشرف رسول کا سول ایوی ایشن کا کوئی تجربہ نہیں، سلیکشن کمیٹی میں مشیر ہوا بازی مہتاب عباسی کی موجودگی اجنبی تھی۔ اس کیس کا فیصلہ جسٹس اعجاز الاحسن نے تحریر کیا ہے جس میںمزید کہا گیا ہے کہ پی آئی اے پہلے قریب المرگ اور تباہی کے دہانے پر تھی یہ تقرر اپنے دوستوں کو نوازنے کی بڑی مثال ہے، اس تقرر میں عوامی مفاد کا خیال نہیں رکھا گیا۔