جسٹس فائز برطانیہ میں جایداد کے مالک ہیں، حکومت

36

اسلام آباد(نمائندہ جسارت) اٹارنی جنرل انور منصور خان نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرایا ہے کہ برطانیہ میں جایدادوں کے مالک جسٹس فائز ہیں اور بچے ان کے بے نامی دار ہیں۔سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی کیخلاف ریفرنس کے حوالے سے اٹارنی جنرل انور منصور خان نے اپنا جواب جمعکرادیا۔اٹارنی جنرل نے کہا کہ برطانیہ میں تین جایدادوں کے اصل مالک جسٹس قاضی فائزعیسی ہیں اور ان کے بچے ان کے بے نامی دار ہیں۔ جسٹس قاضی فائز عیسی جایداد خریدنے کے ذرائع بتانے سے گریز کر رہے ہیں۔اٹارنی جنرل نے کہا کہ جسٹس قاضی فائز عیسی کے الزامات محض مفروضوں پر مبنی ہیں، ان کی سپریم جوڈیشل کونسل کیخلاف درخواست قابل سماعت نہیں جبکہ بطور اٹارنی جنرل سپریم جوڈیشل کونسل کی معاونت کرنا آئینی ذمہ داری ہے۔ اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ احتساب سے کسی کو استثنا حاصل نہیں، احتساب اور شفافیت جمہوریت کا حصہ ہے۔اٹارنی جنرل نے مزید کہا کہ وزیر قانون فروغ نسیم کا بار کونسلز میں چیک تقسیم کرنا غلط نہیں جبکہ صدر اور وزیر اعظم کو اپنی ذمہ داریوں پر آرٹیکل 248 کا استثنا ہے۔
جسٹس فائز عیسیٰ کیس