ریونیو کے عدالت میں چلنے والے مقدمات کی پیروی اچھی طرح کی جائے

79

عمرکوٹ (نمائندہ جسارت) عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لیے ضلع میں بہتر ماحول قائم کیا جائے اور ریونیو کے حوالے سے جو بھی کورٹ کیس چل رہے ہیں ان کی پیروی اچھی طرح کی جائے۔ ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ ندیم الرحمن میمن نے ریونیو افسران کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے ڈپٹی کمشنر آفس کے دربار ہال میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے چاروں تعلقوں کے اسسٹنٹ کمشنر اور مختارکاروں سے سال 2018-19ء کی خریف اور ربیع کی فصل کی بوائی کی پڑتال رپورٹ، ایگریکلچرل انکم ٹیکس، اویکیو اینیمی پراپرٹی کی زمینوں سے متعلق تفصیلی بریفنگ لی۔ اس موقع پر انہوں نے ہدایات دی کہ تمام مختارکار سال 2018-19ء کی تمام جمع بندی، ایگریکلچرل انکم ٹیکس، سیل سرٹیفکیٹ فیس کی رپورٹ دو دن کے اندر جمع کروائیں۔ انہوں نے اسسٹنٹ کمشنروں کو ہدات کی کہ کوئی بھی زرعی زمین کسی ہاؤسنگ اسکیم میں تبدیل ہو تو اس کی مکمل رپورٹ ہر پندرہ دن کے اندر دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ سال 2018-19ء کے آخر میں سالانہ اکاؤنٹ کا ریکارڈ تعلقہ لیول پر جمع کروایا جائے اور خریف اور ربیع کی جمع بندی کے ریکارڈ کی تصدیق کروائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی زمیندار کی کل آمدنی 12 لاکھ سے اوپر ہے تو ان پر زرعی انکم ٹیکس لاگو کرکے رپورٹ جمع کروائی جائے۔ انہوں نے ضلع کے تمام تپیداروں کو ہدایت کی کہ اینیمی پراپرٹی، اویکیوٹرسٹ پراپرٹی کی تفصیل اور مینارٹی کی زمینوں پر چلنے والے کیس کی مکمل رپورٹ دی جائے۔ اس موقع پر انہوں نے اسسٹنٹ کمشنر کنری کو ہدایت کی کہ تھرکول پراجیکٹ کی گزرنے والی لائنوں کے راستے میں آنے والی زمینوں کی تفصیل دی جائے۔ اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ون حق نواز شر، چاروں تعلقوں کے اسسٹنٹ کمشنر اور مختارکاروں نے شرکت کی۔