کس طرح نئی نسل کو سمجھائیں

98

میری پڑوسن بیمار تھیں، میں اُن کی عیادت کو گئی تو وہ اپنی نواسی کا قصہ سنانے لگیں کہ وہ آج کل امریکا سے آئی ہوئی تھیں، اس کو انہوں نے جے ڈاٹ سے کپڑے دلوائے۔ جو شرٹ بغیر آستینوں کے تھی وہ سائز چھوٹا تھا جب بدل کر بڑا سائز آیا تو اس میں آستینیں تھیں جسے دیکھ کر وہ بچی بہت روئی کہ میں آستینوں والی شرٹ نہیں پہنوں گی۔ یہ واقعہ بتا کر میری پڑوسن رونے لگیں، ہم کس طرح نئی نسل کو سجھائیں۔ آپ کے اخبار کے توسط سے ارباب اختیار سے گزارش کرتی ہوں کہ وہ خدارا تمام ڈیزائنرز کو پابند کریں کہ عریاں لباس کی سپلائی بند کریں۔
رخشندہ اعجاز