نفرت انگیز تقریر:برطانیہ میں بانی ایم کیو ایم پر فرد جرم عائد

120

لندن:نفرت انگیز تقریر کے الزام میں بانی ایم کیوایم الطاف حسین پر برطانیہ میں فرد جرم عائد کردی گئی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نفرت انگیز تقریر کے الزام میں ضمانت ختم ہونے پر بانی ایم کیو ایم تیسری بار لندن کے سدک پولیس اسٹیشن میں پیش ہوئے جہاں انہوں نے تیسری بار بھی لندن پولیس کے سوالوں کے جوابات نہیں دیے،لندن پولیس نے جوابات نہ دینے اور شواہد کی روشنی میں ان پر فرد جرم عائد کی  ہے،بانی ایم کیوایم پر فرد جرم ٹیررازم ایکٹ کے تحت عائد کی گئی۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ الطاف حسین پر کراؤن پراسیکیوشن سروس نے فرد جرم عائد کی جس کے بعد انہیں ویسٹ منسٹر کی کورٹ میں پیش کیا جائے گا جہاں مجسٹریٹ انہیں فرد جرم پڑھ کر سنائیں گے۔ کراؤن پراسیکیوشن نے دعویٰ کیا ہے کہ پولیس کے پاس کافی شواہد ہیں۔

ذرائع کےمطابق فرد جرم عائد ہونے کے بعد بانی ایم کیوایم کے خلاف ٹرائل تقریباً 2 ہفتے میں مکمل ہوجائے گا۔

واضح رہےکہ بانی ایم کیو ایم پر اگست 2016 میں تقریر کے ذریعے لوگوں کو تشدد پر اکسانے کا الزام ہے۔