تنازع کشمیر حل نہ ہوا تو خطے پر سنگین اثرات مرتب ہونگے، آرمی چیف

204
بیجنگ: پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی قیادت میں وفد چینی فوجی قیادت سے ملاقات کررہاہے
بیجنگ: پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی قیادت میں وفد چینی فوجی قیادت سے ملاقات کررہاہے

 

اسلام آباد (اے پی پی) پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے چین کی پیپلز لبریشن آرمی کے کمانڈر جنرل ہان ویگو اور سینٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چیئرمین سے بھی ملاقات کی جس میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سمیت علاقائی سلامتی کی صورتحال اورپاک چین دفاعی تعاون پر بھی گفتگو ہوئی۔آئی ایس پی آر کے مطابق جنرل قمرجاوید باجوہ کو پیپلز لبریشن آرمی کے ہیڈکوارٹرز کے دورہ کے موقع پر گارڈ آف آنر پیش کیا گیا ۔ چین کی فوجی قیادت نے کشمیر پر پاکستان کے اصولی مؤقف کو سراہا اور امن کے لیے پاکستان کے اقدامات کی تعریف کی جبکہ دونوں ملکوں کی فوجی قیادت نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پاک بھارت جاری کشیدگی دور نہ ہونے سے خطے کے امن واستحکام پرسنگین نتائج ہوں گے۔اس کے علاوہ پاک چین فوجی قیادت نے تاریخی باہمی تعلقات کے تحت دفاعی
تعاون بڑھانے پر بھی اتفاق کیا۔ آرمی چیف نے مسئلہ کشمیر پْرامن حل نہ ہونے کی صورت میں کشمیر میں جاری صورتحال کے ممکنہ نتائج سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کا احترام کرتے ہوئے کشمیرمیں انسانی حقوق کی فراہمی یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان امن چاہتا ہے لیکن قوم کے وقار اور اصولوں پر سمجھوتے کی قیمت پر نہیں۔
آرمی چیف