ٹنڈو جام،ترقی پسند پارٹی کے رہنمائوں پر فائرنگ،2 زخمی

65

ٹنڈوجام(نمائندہ جسارت) ٹنڈوجام ٹیکنکل کے قریب ترقی پسند پارٹی کے رہنما پر قاتلانہ حملہ۔ دو افراد شدید زخمی۔ الزام متحدہ پر ،تین افراد گرفتار۔ زخمیوں کو اسپتال منتقل کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق سندھ ترقی پسند پارٹی ٹنڈوجام کے رہنما ممتاز سراج اورعامر عمرانی حیدرآباد جا رہے تھے کہ ٹیکنکل کالج ٹنڈوجام کے قریب نامعلوم افراد نے ان پر فائرنگ کردی جس کی وجہ سے یہ دونوں شدید زخمی ہو گئے جنھیں
سول اسپتال حیدرآباد پہنچایا گیا جہاں پر ان کے زخمی ہونے کی خبر سن کر ترقی پارٹی کے کارکنان اور رہنما اور مرکزی رہنما الطاف جسکانی پہنچ گئے اسپتال ذرائع کے مطابق ممتاز سراج کو ایک گولی لگی ہے جب کہ عامر عمرانی کو تین گولیاں لگی ہیں اس موقع پر الطاف جسکانی نے الزام لگایا کہ اس واقعہ کے پیچھے ایم کیو ایم کا ہاتھ ہے ہمارا ایک زخمی کارکن انھیں پہنچاتا ہے ان کے اس لزام لگانے کے بعدٹنڈوجام پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے مختلف علاقوں سے متحدہ کے کارکن ارشاد راجپوت فرحان راجپوت اور نعمان راجپوت کو گرفتار کرکے نامعلوم جگہ پر منتقل کر دیا اور پولیس اس سلسلے میں مزید تحقیقات کر رہی ہے جب اس واقعہ اور گرفتاریوں کی وجہ سے شہر میں کشیدگی پائی جاتی ہے۔
قاتلانہ حملہ