اگلے ماہ 22 جیلوں میں آٹومیشن سسٹم کا نیٹ ورک لگ جائے گا‘چیف سیکرٹری

146

کراچی ( اسٹاف رپورٹر)چیف سیکرٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کہا ہے کہ نومبر تک 22 جیلوں میں آٹومیشن سسٹم کا نیٹ ورک لگ جائے گا۔ آٹومیشن سے عدلیہ، پولیس اور نادرا کا سسٹم ملایا جائے گا جس سے کیس مینجمنٹ اور ریکارڈ کو محفوظ رکھنے میں مدد ملے گی۔ صوبے کی جیلوں میں 100 سے زائد انفارمیشن ٹیکنالوجی کے اہلکار بھرتی کیے جائیں گے۔یہ بات انہوں نے منگل کو صوبے کے جیلوں کی حالت بہتر بنانے کیلیے سندھ سیکرٹریٹ میں منعقدہ اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔اجلاس میں وفاقی محتسب سید طاہر شہباز، سیکرٹری داخلہ، آئی جی جیل سمیت وفاقی اور صوبائی حکومت کے متعلقہ افسران شریک ہوئے۔ ممتاز علی شاہ نے کہا کہ صوبے میں وفاقی محتسب کی دی گئی سفارشات پر جیلوں میں اصلاحات لائی جارہی ہیں، جیلوں میں اصلاحات کے لیے محکمہ تعلیم، صحت، سوشل ویلفیئر اور سول سوسائٹی کام کررہی ہیں۔ انہونے مزید کہا کے صوبائی جیلوں کے لیے اوور سائیٹ کمیٹیاں بھی تشکیل دی گئی ہیں جن میں عدلیہ، سول سوسائٹی، تعلیم و صحت کے ماہرین اور مخیر حضرات شامل ہیں۔ یہ اوور سائیٹ کمیٹیاں مختلف جیلوں کا دورہ کر کے اصلاحات اور انتظامی امور کا جائزہ لیتی ہیں۔ ممتاز علی شاہ نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت نے صوبے کے جیلوں میں قیدیوں کی اصلاحات کے لیے تعلیم اور صحت اور ٹیکنیکل تربیت کے حصول کو آسان بنایا ہے۔ قیدیوں کو لیگل ایڈ بھی دی جاتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ صوبائی جیلوں میں آٹومیشن سسٹم لگا رہے ہیں۔