فضل الرحمن مودی کے ایجنڈے کو فروغ دے رہے ہیں،علی امین گنڈا پور

56

اسلام آباد (اے پی پی) وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈاپور نے کہا ہے کہ فضل الرحمن مودی کے ایجنڈے کو فروغ دے رہے ہیں‘ ان کے پاس ثبوت موجود ہیں کہ انہیں آزادی مارچ کے لیے کہاں سے فنڈنگ ہو رہی ہے ،ان کا ایجنڈا پاکستان کو غیر مستحکم کرنا ہے، انہیں مدارس میں زیر تعلیم طالب علموں کو ایجنڈے کا حصہ بنانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ پیر کو پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت پوری قوم اور حکومت یکسو ہو کر کشمیر کے مسئلے کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کے لیے کام کررہی ہے ۔ کشمیر میں 2 ماہ سے زاید عرصے سے کرفیو اور لوگوں کو گھروں میں محصور کیا گیا ہے۔ اس صورتحال میں مولانا فضل الرحمن مودی کے ایجنڈے کو تقویت دینے اور پاکستان کو کمزور کرنے کے ایجنڈے پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن اقتدار کے لئے ہمیشہ منبر کو استعمال کرتے ہیں۔ مدارس کے بچوں کو سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ ہم نے ان کو بے نقاب کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کو لیگل نوٹس بھجوا رہا ہوں۔ وہ 15 دنوں میں اس کا جواب دیں، اگر وہ جواب نہیں دیں گے وہ پھر ان کے خلاف کارروائی کریں گے اور یہ ثبوت پیش کریں گے کہ وہ کس ایجنڈے پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن موجودہ حکومت کے آغاز سے ہی الزام تراشی پراترے ہوئے ہیں، وہ کبھی عمران خان کو یہودی ایجنٹ قرار دے رہے ہیں اور کبھی حکومت کی جانب سے اسرائیل کو تسلیم کرنے کا گمراہ کن پروپیگنڈا کر رہے ہیں جس سے مودی کے ایجنڈے کو تقویت مل رہی ہے ۔ عمران خان سچے عاشق رسولؐ اور ریاست مدینہ کے داعی ہیں۔ پاکستان مسلمانوں کی امنگوں کا مرکز ہے۔ مولانا فضل الرحمن کو عوام نے ووٹ نہیں دیے۔ انہوں نے لیگل نوٹس کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایاکہ 22 ستمبر2019ء کو مولانا فضل الرحمن نے لاہور میں ہونے والی تقریر میں من گھڑت الزام لگائے جو پورے پاکستان میں سنی گئی۔
امین گنڈا پور