حیدرآبادکے تاجروں ،صحافیوں کو کشمیر مارچ میں شرکت کی دعوت

62
حیدرآباد: امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے صدر گوہر اللہ، سینئر نائب صدر شاکر میمن اور نائب صدر حاجی الٰہی کو کشمیر مارچ کا دعوت نامہ دے رہے ہیں
حیدرآباد: امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے صدر گوہر اللہ، سینئر نائب صدر شاکر میمن اور نائب صدر حاجی الٰہی کو کشمیر مارچ کا دعوت نامہ دے رہے ہیں

حیدرآباد (اسٹاف روپرٹر) امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید کی قیادت میں جماعت اسلامی وفود نے پریس کلب اور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا۔ پریس کلب عہدیداران ،صحافیوں اور تاجروں کو کشمیر مارچ کی دعوت دی جس پر رہنماؤں نے آمد پر عہدیداران نے خیر مقدم کیا ، اس موقع پر تاجر و صحافی برادری کی جانب سے کشمیر مارچ میں شرکت کی دعوت قبول کرتے ہوئے شرکت کرنے اور ہر ممکنہ تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی۔ تفصیلات کے مطابق امیر جماعت اسلامی ضلع حیدرآباد حافظ طاہر مجید کی قیادت میں وفد نے حیدرآباد پریس کلب کے صدر لالا رحمن سموں، سیکرٹری محمد حسین خان، 92 نیوز حیدرآبادکے بیورو چیف حمید الرحمن، عوامی آواز کے بیورو چیف اقبال ملاح، جنگ اخبار کے رپورٹر امجد اسلام، فوٹو جرنلسٹ ایسوسی ایشن حیدرآباد کے صدر علیواحد، جنرل سیکرٹری اکرم شاہد اور دیگر صحافیوں سے ملاقات کی اور کشمیر مارچ میں شرکت کی دعوت دی۔ دوسری جانب امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید کی قیادت میں جماعت اسلامی کا وفد کے ہمراہ حیدرآباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے صدر گوہر اللہ، سینئر نائب صدر شاکر میمن، نائب صدر حاجی گلشن الٰہی ، چیمبر آف اسمال ٹریڈرز کے صدر دولت رام لوہانہ، نائب صدر اکرم انصاری، سابق صدر فاروق شیخانی سے ملاقات کی۔ جماعت اسلامی کے رہنماؤں نے کشمیر مارچ کی دعوت دی ۔ دونوں تاجر تنظیموں نے کشمیر مارچ میں بھرپور شرکت اور تعاون کا یقین دلایا۔ امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید نے کہا کہ مودی نے اکھنڈ بھارت کی بنیاد رکھتے ہوئے جموں و کشمیر کو ہڑپ کرنے کا شر کھڑا کیا ہے یہ شر خود بھارت کو تباہ کرے گا۔ اللہ تعالیٰ نے ہمیشہ فرعون کے لیے موسیٰ پیدا کیا ہے۔کشمیریوں کی لازوال قربانیاں مودی فرعون کے تکبر کو سمندر میں غرق کردیں گی۔انھوں نے کہا کہ حق خود ارادیت کشمیر یوں کا بنیادی انسانی حق ہے۔حکمران عالمی برادری اور عالم اسلام کے عدم تعاون کی فکر نہ کریں۔اگر پاکستان کو حمایت نہیں مل رہی تو عالمی برادری نے مودی اقدامات کی بھی حمایت نہیں کی۔ ریاست کے پاس سفارتی محاذ کے علاوہ بھی متعدد محاذ ہیں حکومت اپنی ترجیحات کا تعین کرے ۔قوم ٹیکس دے سکتی تو وہ حکومت کے راست اقدام کا ساتھ بھی خوش و خروش سے دیگی۔اس موقع پر نائب امیر جماعت اسلامی حیدرآباد ڈاکٹر سیف الرحمٰن، جنرل سیکرٹری مطاہر خان، ڈپٹی جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی حیدرآباد عبدالقیوم حیدر، حنیف شیخ بھی موجود تھے۔
تاجر و صحافی دعوت