طالبان کی پاکستان آمد کو خوش آئند قرار دینے پر افغان وزارت خارجہ کے ترجمان برطرف

64

افغان صدر اشرف غنی نے افغان طالبان کی پاکستان آمد اور اعلی حکام سے ملاقات کوخوش آئند قرار دینے پر افغان وزارت خارجہ کے ترجمان صبغت اللہ احمدی کو عہدے سے برطرف کردیا ہے۔اشرف غنی کے ترجمان صادق صدیقی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ صبغت اللہ احمدی کو ان کے غیر ذمہ دارانہ بیان پر برطرف کیا گیا ہے ۔

رواں ہفتے افغان طالبان کے سیاسی ونگ کا 12 رکنی وفد ملا عبدالغنی بردار کی قیادت میں پاکستان پہنچا تھا جہاں  ان کی اعلیٰ پاکستانی حکام سے ملاقاتیں ہوئی تھیں، پاکستان اور افغان طالبان کے درمیان ہونے والے اس ملاقات پر اشرف غنی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ ملاقات امن مرحلے میں مددگار ثابت نہیں ہوگی ۔اشرف غنی کے ترجمان نے پاکستان میں ہونے والی ان ملاقاتوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ پر تشدد گروہ کی میزبانی اصول کے خلاف ہے۔

دوسری طرف افغان وزارت خارجہ کے ترجمان صبغت اللہ احمدی نے طالبان کی پاکستانی حکام سے ملاقات کو خوش آئند قرار دیا تھا،انہوں نے افغانستان کے امن عمل کو دوبارہ شروع کرنے کے لئے علاقائی اور عالمی کوششوں کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ہم افغانستان میں امن عمل کے لئے خطے اور دنیا کے تمام ممالک کی کاوشوں کا خیرمقدم کرتے ہیں.

اشرف غنی کے ترجمان صادق صدیقی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ امن کے حوالے سے پالیسیاں افغانستان کے صدارتی محل سے جاری ہوتی ہیں،پاکستان اور افغان طالبان کے درمیان  ملاقات کے حوالے سے صبغت اللہ احمدی کا بیان ان کی ذاتی رائے ہے۔