سوشل میڈیا پر وائرل ہدایت نامہ من گھڑت ہے، عبدالغفور حیدری

238

جے یو آئی رہنما سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا پر دھرنے سے متعلق ان کی جماعت کے حوالے سے وائرل ہدایت نامہ من گھڑت ہے ،انہوں نے الزام عائد کیا کہ مذکورہ جعلی ہدایت نامہ پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے فیس بک پر جاری کیا گیا ہے جس کی ہم شدید مذمت کرتے ہیں۔

پارٹی رہنماؤں کے ہمرا جاری ویڈیو پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ ہدایت نامے سے جمعیت علمائےاسلام کا کوئی تعلق ہےنہ ہی کارکنان اس ہدایت نامے کو  شیئر کریں.

واضح رہے کہ سوشل میڈیا پر گزشتہ روز سے زیر  گردش متنازع 10 نکاتی ایجنڈے میں جے یو آئی کارکنوں اور مارچ میں شرکت کرنے والے افراد کو جہاں مختلف ہدایات دی گئی تھیں وہیں  اس ہدایت نامے کے  ایک متنازع نکتہ پر وفاقی وزرا سمیت دیگر افراد نے شدید تنقید کی تھی . مذکورہ نکتہ میں کہا گیا تھا کہ  کارکنان اپنے امیر کی اجازت کے بغیر ناشائستہ کاموں سے اجتناب کریں، خلاف ورزی کی صورت میں ملوث کارکنان کا سامان ضبط کرتے ہوئے انہیں دھرنے سے باہر نکال دیا جائے گا.

اس سے قبل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ اسلام آباد کے دفتر سے متعلق زیر گردش  نوٹی فکیشن  کو بھی ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے  جعلی قرار دیا ہے ۔7 اکتوبر کو جاری ہونے والے اس متنازع نوٹی فکیشن میں کسی بھی جماعت کا نام لئے بغیر27 اکتوبر کو اسلام آباد میں ہونے والے اجتماع میں ممکنہ ہم جنس پرستی کی لہر پر تشویش کا اظہار کیا گیا تھا ۔

ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ اسلام آباد حمزہ چوہدری کے نام سے منسوب مبینہ نوٹی فکیشن میں سیاسی جماعت کے کارکنان کو اجتماع کے دوران غیر اخلاقی سرگرمیوں سے اجتناب کی ہدایت کی گئی تھی تاہم ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقت نے اپنے ٹویٹر بیان میں مذکورہ نوٹی فکیشن کو جعلی قرار دیا ہے۔