سائیکل کے مثالیں دینے والوں نے ہیلی کاپٹر کلچر متعارف کروادیا،امیر جماعت اسلامی کے پی

318

امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا سینیٹر مشتاق احمدکا کہنا ہے کہ سائیکل کے مثالیں دینے والوں نے ہیلی کاپٹر کلچر متعارف کروایا ہے۔

سینیٹر مشتاق احمد نے تیمرگرہ میں جے آئی یوتھ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت آزاد کشمیر کی آزادی کا روڈ میپ دے ہمیں ڈونلڈ ٹرمپ کی ثالثی قبول نہیں ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حق خود ارادیت دیا جائے۔

سینیٹر مشتاق نے سوال کیا کہ حکومت بتائے کہ اس نے اقوام متحدہ میں بھارت کے خلاف قرار داد کیوں پیش نہیں کی؟۔انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں بھارتی سفارت خانہ ابھی تک بند نہیں کیا گیااور بھارت کے ساتھ تجارت بھی جاری ہے۔ دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں بھارتی لاک ڈاؤن کو 62 دن ہوگئے ہیں جو ایک انسانی المیہ ہے۔

امیر جماعت اسلامی خیبر پختون خواہ نےکہا کہ  وہ لائن آف کنٹرول کو کراس کرنے اور سری نگر کی طرف مارچ کرنے کی مکمل حمایت کرتے ہیں،حکومت واضح کرے کہ اگر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کو حق خود ارادیت نہیں دیا جاسکتا تو جہاد کا اعلان کردیں گے۔

سینیٹر مشتاق احمد خان نے الزام عائد کیا کہ حکومت احتساب کو انتقام کے ٹول کے طور پر استعمال کررہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ دو کروڑ 20 لاکھ بچے اسکولوں سے باہر ہیں جب کہ 76 لاکھ نوجوان منشیات کے عادی ہیں جو کہ حکمرانوں کی نا اہلی کا ثبوت ہیں، پشاور بی آر ٹی موجودہ حکومت کی کرپشن کا سب سے بڑا ثبوت ہے۔

انہوں نے حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سائیکل کے مثالیں دینے والوں نے ہیلی کاپٹر کلچر متعارف کروایا ہے۔