اسمبلی کا گھیرائو کرکے سب کو استعفا دینے پر مجبور کریں گے، عبدالقیوم شیخ

45

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) سابق رُکن سندھ اسمبلی عبدالقیوم شیخ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ عوام سے ووٹ لے کر ووٹر کو عزت نہیں ملی اور نہ ہی عوام درپیش مشکلات کے ازالے کے لیے قانون سازی کی جاتی، عوام پارلیمنٹرین کو خزانے پر بوجھ سمجھتے ہوئے اراکین پارلیمنٹ صوبائی اسمبلی سے استعفا لینے کا حق رکھتے ہیں۔ استعفا اسپیکر کو نہ دینے پر عوام 1977ء کی طرح تحریک اسمبلی چلانے پر مجبور ہوگی، پورے ملک میں اراکین پارلیمنٹ صوبائی اسمبلی کا گھیرائو کرکے سب کو استعفا دینے پر مجبور کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ باپ، بیٹا، بیٹی، چچا، بھانجا سمیت پورے خاندان کا سیاست میں حصہ لینا جمہوریت ہے یا بادشاہت۔ انہوں نے کہا کہ پولیٹیکل ایکٹ بناکر سیاسی جماعتوں کو پابند نہیں کیا گیا جس کے رد عمل میں جمہوریت دور تک دکھائی نہیں دیتی۔ انہوں نے کہا کہ محب وطن حلف یافتہ تجربے کار جن پر کرپشن کے الزامات نہیں ہوں، سویلین انقلابی احتسابی کونسل کا قیام عمل میں لاکر تقرریاں کرنا وقت کا تقاضا ہے، جو حقائق کو مد نظر رکھتے ہوئے لوٹی ہوئی دولت واپسی کے لیے حقائق پر مبنی قانون بناکر قانون کے پیچھے چھپنے کی راہ بند کردے گی۔ کرپشن میں ملوث ہزاروں افراد سے لوٹی ہوئی دولت ہر قیمت واپس لینی ہوگی۔