ادویات اوربجلی کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ سراسر ظلم ہے، حسین محنتی

94

کراچی(نمائندہ جسارت)جماعت اسلامی سندھ کے امیر و سابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے ادویات 7 فیصد اور بجلی 2 روپے فی یونٹ مزید مہنگی کر کے عوام پر 53 ارب کا بوجھ ڈالنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتی دعوئوں کے برعکس اس کی ایک سالہ کارکردگی نے عوام کو سخت مایوس کیا ہے۔ ایک سال میں مہنگائی کی رفتار دگنی ہوگئی ہے۔ آٹا، چینی، چاول، گھی سمیت روز مرہ کی ضروری اشیا کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں عام آدمی 2 وقت کی روٹی کے لیے بھی سخت پریشان ہے۔ تبدیلی اور عوام کو ریلیف دینے کے تمام دعوے ریت کی دیوار ثابت ہوئے ہیں۔ انہوں نے ایک بیان میں بجلی کی قیمت بڑھانے کو
حکومت کا عوام دشمن فیصلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ پچھلے ایک سال سے تبدیلی کی دعویدار حکومت نے اپنے اقدامات سے عوام کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے۔ ہر آنے والا دن عوام کے لیے نئی مشکلات لے کر طلوع ہوتا ہے۔ گیس، پیٹرول اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے بعد اب ادویات کی قیمتوں میں بھی اضافہ کر کے عوام سے علاج معالجے کی معمولی سکت بھی ختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ بجلی کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ عوام کے ساتھ سراسر ظلم ہے۔ ہمارے عوام پہلے ہی خطے کے دیگر ممالک بھارت، ایران، بنگلا دیش اور چین وغیرہ کے مقابلے میں انتہائی مہنگی بجلی استعمال کرنے پر مجبور ہیں ۔ صوبائی امیر نے زور دیا کہ حکومت عوام کی حالت زار پر رحم اور اپنے منشور پر عمل کرکے عوام کو ریلیف دینے کے کرپشن فری اقدامات کرے۔ لائن لاسزو کرپشن کا خاتمہ ،بند بجلی گھر فعال اور سستی بجلی پیدا کرنے کی ٹھوس منصوبہ بندی کرکے عوام کوبجلی بحران سے نجات دلائی جائے۔
حسین محنتی