الیکشن کمیشن اراکین کی تعیناتی کیس سماعت کیلیے منظور‘ فریقین کو نوٹس

54

اسلام آباد (آن لائن) اسلام آباد ہائیکورٹ نے الیکشن کمیشن کے2 نئے اراکین کی تعیناتی کے خلاف درخواست سماعت کے لیے منظورکرتے ہوئے فریقین کو نوٹسز جاری کردیے۔ مقدمے کی سماعت چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کی۔ عدالت نے سندھ اور بلوچستان سے منتخب ہونے والے ارکان
الیکشن کمیشن کے تقرر سے متعلق کیس پر سماعت کی اور فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔ عدالت نے سینئر وکلاحامد خان، خالد انور اور مخدوم علی خان کو عدالتی معاون مقررکیا ہے۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے دوران سماعت ریمارکس دیے کہ پارلیمنٹ کے اسپیکر اسمبلی اس حوالے سے معاملات دیکھ سکتے ہیں، پارلیمنٹ کو اپنے طور پر ایسے معاملات حل کرنے چاہییں۔ چیف جسٹس نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کیا کہ پارلیمانی کمیٹی متفق نہ ہوسکے تو آئین کیا کہتا ہے؟، پارلیمانی کمیٹی کا فیصلہ کدھر ہے۔ وکیل درخواست گزار نے جواب دیا کہ ہم نے اسپیکر قومی اسمبلی کو درخواست دی لیکن میٹنگ کے منٹس نہیں ملے۔ پارلیمانی کمیٹی کے اختلافات کے بعد آئین اس معاملے پر خاموش ہے۔3 کمیٹی کے اجلاسوں میں اراکین الیکشن کمیشن کی تعیناتی پر اتفاق نہیں ہوسکا۔ درخواست گزار پارلیمانی کمیٹی کے ارکان ہیں۔ کیس کی سماعت11 اکتوبر تک ملتوی کردی گئی۔
الیکشن کمیشن