لاہور، میو اسپتال کی لفٹ میں پھنس کر 13 سالہ بچہ جاں بحق

102

لاہور:میو اسپتال میں والد کی تیمارداری کے لیے موجود 13 سالہ بچہ لفٹ میں پھنس کر جاں بحق ہوگیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نویں جماعت کا طالبعلم فہد زاہد ڈینگی کے مرض میں مبتلا والد کی دیکھ بھال کے لیے اسپتال میں موجود تھا۔ فہد والد کے خون کے ٹیسٹوں کے لیے لیبارٹری جارہا تھا کہ لفٹ کے درمیان موجود خلا میں اس کا سر پھنس گیا۔ وہ ایک گھنٹے تک لفٹ میں پھنسا رہا لیکن کوئی اسے نکالنے میں کامیاب نہیں ہوا۔

میواسپتال کی انتظامیہ نے واقعہ کی تحقیقات اور ذمہ داروں کے تعین کے لیے چار رکنی کمیٹی بنا دی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے سیکرٹری اسپیشلائزڈ ہیلتھ کیئراینڈمیڈیکل ایجوکیشن سے رپورٹ طلب کرلی۔ عثمان بزدار نے کہا کہ واقعہ کی ہر پہلو سے تحقیقات کر کے غفلت کے ذمہ داروں کا تعین کر کے کارروائی عمل میں لائی جائے۔