بھارتی خلائی سائنسدان کےقتل میں قریبی دوست ملوث نکلا

51

حیدرآباد دکن:بھارتی خلائی سائنسدان سریش کمار کا قاتل منظر عام پر آگیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق خلائی سائنس دان سریش کمار کو ان کے ہم جنس پرست دوست نے ’جنسی خدمات‘ کے عوض طے شدہ رقم نہ ملنے پر قتل کیا۔ حیدرآباد دکن کے ایک اپارٹمنٹ سے یکم اکتوبر کو سرکاری خلائی ادارے ’اسرو‘ میں کام کرنے والے 56 سالہ سائنس دان کی لاش ملی تھی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فرانزک لیب کی رپورٹ، عینی شاہدین کے بیانات اور تحقیقات سے ثابت ہوگیا ہے کہ سائنس دان کا قتل اُن کے ہم جنس پرست دوست نے کیا۔

پولیس ترجمان نے کہا کہ سائنس دان اپارٹمنٹ میں تنہا رہتے تھے اور ایک 39 سالہ لیب ٹیکنیشین جناگاما سری نیواس کے ساتھ ہم جنس پرستی میں مبتلا ہوگئے تھے اور اسی جنسی پارٹنر سری نیواس نے پیسے نہ ملنے پر سریش کمار کو تیز دھار چھری کے وار کرکے قتل کردیا۔

56 سالہ سریش کمار بھارتی خلائی ادارے کے ذیلی ادارے نیشنل ریموٹ سینسنگ سینٹر (این آر ایس سی) میں بطور سائنسدان خدمات سرانجام دے رہے تھے۔

واضح رہے بھارت کی چاند پر اترنے کی دوسری کوشش بھی ناکام ہوگئی تھی اور خلائی مشن چندریان ٹو کا رابطہ چاند پر لینڈنگ سے چند منٹ پہلے منقطع ہوگیا تھا۔