حیدرآباد ، حیسکو کی 13 اضلاع میں کارروائی ،400 غیر قانونی کنڈے منقطع

67

حیدر آباد (اسٹاف رپورٹر) حیسکو ترجمان کے مطابق چیف ایگزیکٹو آفیسر عبدالحق میمن کی ہدایات پربجلی چوروں کیخلاف کارروائیاں جاری ہیں۔ اس سلسلے میں حیسکو ریجن کے 13 اضلاع میں خصوصی ٹاسک فورسز، S&I، M&T کی ٹیموں کی مدد سے کارروائیاں کی جارہی ہیں۔ حیدر آباد کے علاقے حسین آباد، قاسم آباد، لطیف آباد جبکہ ٹھٹھہ، نوابشاہ، ہالا، بھٹ شاہ، ٹنڈو آدم، ٹنڈوالہٰیار، میرپور خاص ودیگر علاقوں میں کارروائیوں کے دوران 1050 کنکشن چیک کیے گئے، 400 غیر قانونی کنڈا کنکشن کاٹے گئے جبکہ متعدد نادہندگان کے کنکشن واجبات کی عدم ادائیگی پر منقطع کیے گئے۔ اس کے علاوہ 10 لاکھ سے زائد کے واجبات کی عدم ادائیگی پر 17 گائوں کی بجلی اور 9 ٹیوب ویل کے کنکشن بھی منقطع کردیے گئے۔ بجلی چوروں کیخلاف مروجہ قانون کے تحت ایف آئی آر درج کرانے کے لیے متعلقہ تھانوں میں لیٹر جمع کرا دیے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ متعدد نادہندگان کے بجلی کے کنکشن ادائیگی تک منقطع کردیے گئے۔ واضح رہے کہ حیسکو چیف کے واضح احکامات ہیں کہ یہ کمرشل ادارہ بجلی کے بلوں کے پیسوں پر رواں دواں ہے، اس لیے بجلی خرید کر اپنے صارفین کو دیتے ہیں، لہٰذا کسی کو بھی مفت میں بجلی فراہم نہیں کی جائے گی۔ اس لیے بجلی کے واجبات کی 100 فیصد وصولی کو یقینی بنانے کے لیے گھر گھر چیکنگ کرکے واجبات کی ادائیگی چیک کی جارہی ہے۔ عدم ادائیگی پر بجلی کنکشن بلا تفریق منقطع کیے گئے ہیں۔ زیادہ واجبات والے صارفین کی شکایات فوری حل کیے جائیں جس کے لیے کھلی کچہریاں منعقد کی جائیں، جس میں صارفین بجلی کے بلوں کی آسان اقساط بنوا کر بجلی کے بل جمع کروائیں، صارفین کے بجلی کے بلوں کی شکایات کو سننے اور جلد از جلد حل کیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ بجلی چوری میں ملوث کسی بھی شخص کو کسی بھی قسم کی رعایت نہیں دی جائے گی، چاہے وہ حیسکو ملازم ہی کیوں نہ ہو، اس کیخلاف کارروائی مکمل کرکے اس کو نوکری سے فارغ کردیا جائے گا۔