ایل او سی پر بھارتی اشتعال انگیزی سنگین اسٹریٹجک غلط فہمی کا باعث بن سکتی ہے، پاکستان

61

اسلام آباد (اے پی پی) دفتر خارجہ میں ڈائریکٹر جنرل (جنوبی ایشیا و سارک) ڈاکٹر محمد فیصل نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر گوراو اَہلووالیا کو بدھ کو دفتر خارجہ طلب کیا اور یکم اکتوبرکو قابض بھارتی افواج کی جانب سے کنٹرول لائن پر جنگ بندی کی بلااشتعال خلاف ورزیوں کی مذمت اور احتجاج کیا۔ ایل او سی کے نیزہ پیر اور باغ سر سیکٹرز میں بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں50 سالہ بزرگ خاتون نور جہاں شہید ہوئیں جبکہ60 سالہ بزرگ خاتون راشدہ، 70 سالہ بزرگ محمد دین اور ظہیر شدید زخمی ہوئے۔ قابض بھارتی افواج ایل او سی اور ورکنگ بائونڈری کی مسلسل خلاف ورزیاں کرتے ہوئے آرٹلری، بھاری اور خودکار ہتھیاروں کے ذریعے عام شہری آبادیوں کو نشانہ بنا رہی ہیں۔ ڈائریکٹر جنرل (جنوبی ایشیا وسارک) نے بھارت پر زوردیا کہ 2003ء کے جنگ بندی معاہدے کی پاسداری کرے‘ جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کے ان واقعات کی تحقیقات کرائے‘ بھارتی فوج کو جنگ بندی کے احترام کا حکم دے‘{ ایل او سی اور ورکنگ باونڈری پر اس کی روح کے مطابق امن برقرار رکھے۔ انہوں نے زوردیا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق بھارت اقوام متحدہ کے فوجی مبصرین کو اپنا کردار ادا کرنے کی اجازت دے۔