شہباز شریف کی آزادی مارچ میں پارٹی کی قیادت سے معذرت

69

مسلم لیگ (ن) کے صدراور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے مولانا فضل الرحمان کےآزادی مارچ میں اپنی جماعت کی قیادت کرنے سے معذرت کرلی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کوٹ لکھپت جیل میں قید سابق وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی ، ملاقات میں شہباز شریف نے بلاول بھٹو زرداری سے ہونے والی ملاقات اور آزادی مارچ سے متعلق آگاہ کیا۔

اس موقع پر نواز شریف نے شہبازشریف کو آزادی مارچ میں پیپلزپارٹی کو ساتھ ملانے کی ہدایت کی، نواز شریف نے کہا کہ جب تک پیپلزپارٹی ساتھ نہ ہوں اس وقت تک مارچ میں تاخیرکی جائے۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف نے شہباز شریف کو ہدایت کی کہ مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں (ن) لیگی کارکن بھرپور شرکت کریں اور شہباز شریف مارچ میں پارٹی کی قیادت کریں۔

اس پر شہباز شریف نے مارچ میں پارٹی کی قیادت سے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ میری صحت اس چیز کی اجازت نہیں دیتی کہ میں مارچ کی قیادت کروں،ڈکٹرز نے آرام کا مشورہ دیا ہے۔ جس پر نواز شریف نےان کی عدم موجودگی میں احسن اقبال اوردیگررہنماؤں کومارچ میں پارٹی کی قیادت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔