وزیر اعلیٰ سندھ پرالزامات ہیں‘مگر ثبوت نہیں‘ ناصر حسین

45

سکھر(آن لائن)سندھ کے وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ پر الزامات ہیں مگر کوئی ثبوت نہیں ہے، وہ ایک صوبے کے وزیر اعلیٰ ہیں انہیں صرف الزامات پر گرفتار نہیں کیا جاسکتا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ صوبائی وزیر بلدیات کا کہنا تھا کہ نیب کی کارروائیاں صرف پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کے رہنماؤں کے لیے ہیں جبکہ پی ٹی آئی یا ان کے اتحادی رہنماؤں کے خلاف ثبوت بھی موجود ہیں ان کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیںامید تھی کہ خورشید شاہ کی ضمانت ہوجائے گی یا انہیں اسپتال بھیج دیا جائے گا یا پھر ان کوعدالتی ریمانڈ پر دیا جائے گا جس کی ان کے وکلا نے عدالت سے استدعا کی تھی مگر افسوس ایسا نہ ہوسکا۔ وزیر اعظم کی جنرل اسمبلی میں تقریرسے متعلق انہوں نے کہا کہ تقریر تو بہت اچھی تھی لیکن اگر وہ جس وقت کشمیر کا معاملہ شروع ہواتھا وہ اس وقت ایکٹو ہوجاتے اور مختلف ممالک کا دورہ کرتے تو سفارتی سطح پر کامیابی ہوتی لیکن جنرل اسمبلی میں صرف 3 ممالک کے سربراہان نے مسئلہ کشمیر پر بات کی اور دیگر نے چپ رہنا بہتر سمجھا تو یہ حکومت کی سفارتی ناکامی ہے۔