کراچی میں آوارہ کتوں نے 12ہزار شہریوں کو کاٹ لیا

134

کراچی میں آوارہ کتوں کی تعداد میں بے پناہ اضافہ ہوگیا، 9 ماہ میں آوارہ کتوں نے12ہزار سے زائد شہریوں کو کاٹ لیا۔

حکومت سندھ اور بلدیاتی ادارےآوارہ کتوں کے خاتمے کیلئےٹھوس اقدامات نہیں کررہے،میئرکراچی کا کہنا ہے کہ ہمارے پاس کتوں کو مارنے والا زہر موجود ہی نہیں  ہےجبکہ سڑکوں پر کتوں کے غول شہریوں پر حملہ آور ہورہے ہیں۔

شہر کے متوسط اور پوش علاقوں میں آوارہ کتے ہر طرف منڈلاتے نظر آرہے ہیں ، یکم جنوری سے ستمبر تک رواں سال کے 9 ماہ کے دوران صرف جنا ح اسپتال میں 7008 شہری کتوں کے کا ٹنے کی وجہ سے اسپتال پہنچے جنھیں جناح اسپتال میں طبی امداد فراہم کی۔

جنا ح اسپتال کی ڈائریکٹر ڈاکٹر سیمی جما لی نے بتایا ہے کہ کتے کے کاٹنے سے زخمی سیکڑوں افراد اندرون سندھ سے بھی لائے گئے تھے آوارہ کتوں کے خاتمے کیلئےکئی سال سے کوئی حکمت عملی نہیں بنائی جارہی، ڈی ای سیز افسران کہتے ہیں کہ ہمارے پاس کتوں کو مارنے والی زہر موجود نہیں۔