جنید مکاتی کا سٹی کونسل اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف پیش کی گئی قرارداد متفقہ طور پر منظور،

83

کراچی(اسٹا ف رپورٹر)سٹی کونسل میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر جنید مکاتی کا سٹی کونسل اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف پیش کی گئی قراردادایوان نے متفقہ طور پر منظور کر لیا ہے،

تفصیلات کے مطابق بلدیہ عظمیٰ کراچی میں پیر کو سٹی کونسل میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر جنید مکاتی کی جانب سے پیش کی جانے والی قرارداد جس میں کہا گیا کہ بلدیہ عظمی کراچی کا پیر کو سٹی کونسل میں ہو نے والا اجلاس مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کی شدید مذمت کرتا ہے،

اقوام عالم بالخصوص انسانی حقوق کی تنظیموں سے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کی نسل کشی روکنے کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں، اقوام متحدہ کشمیری عوام کو اپنی مرضی سے زندگی گزارنے کا حق انہیں دلائے اور کشمیر میں بھارتی غنڈہ گردی کو روکے،

کشمیر میں معصوم اور نہتے شہریوں کو مسلسل 50ویں روز ناقابل بیان اذیت کا سامنا ہے جس پر امت مسلمہ کی خاموشی حیران کن ہے اور اقوام متحدہ بھی اس پر خاموش ہے،

حالانکہ کشمیر میں لوگوں کو زندہ درگور کردیا گیا، مودی سرکار نے کشمیر میں 8 لاکھ فوج اتار کر بھارت کی مزید تقسیم کی بنیاد رکھ دی ہے، امن نیست و نابود ہو تو جنگ کے آثار بن جاتے ہیں، کشمیر پر اگلی جنگ تیسری عالمی جنگ ثابت ہوسکتی ہے، اگر جنگ چھڑی تو پاکستان کا بچہ بچہ سرحد پر ہوگا،

آج کا اجلاس اقوام متحدہ اور عالمی انسانی حقوق کی تنظیوں سے مطالبہ کرتا ہے کہ بھارتی جا رحیت اور جنگی جنوں کا نوٹس لیں اور کشمیری عوام کی مرضی کے مطابق کشمیری عوام کو جینے کا حق دیا جائے اور کشمیرکو فوری طور پر آزاد کیا جائے، متفقہ طور پر منظور کر لیا گیاہے پیش کی جانے والی قرارداد کے تائید کنندہ حنیف میمن اور تجویز کنندہ محمد جنید مکاتی ہیں،

سٹی کونسل نے کشمیر کی صورتحال پر وزیراعظم اور آرمی چیف کے دوٹوک موقف کی حمایت اور مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی سطح پر اٹھائے جانے کی تائید بھی کی جبکہ اس موقع پر ”کشمیر بنے گا پاکستان“ اور ”لے کر رہیں گے کشمیر“کے نعرے بھی لگائے گئے،کونسل کا اجلاس ڈپٹی میئر سید ارشد حسن کی صدارت میں ایک گھنٹہ تاخیر سے پیر کی سہ پہر کونسل ہال صدر دفتر بلدیہ عظمیٰ کراچی میں منعقد ہواجس میں میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے بھی شرکت کی،

اجلاس میں مجموعی طور پر 19دیگر قراردادوں کی بھی اتفاق رائے سے منظوری دی گئی جن میں گزشتہ بارشوں کے دوران کراچی میں کرنٹ لگنے سے ہونے والی ہلاکتوں پر اظہار افسوس اور اس کے ذمہ داروں کو قرارواقعی سزا دینے کے مطالبے سمیت بلدیہ کراچی کے لانڈھی کورنگی چڑیا گھر اور کراچی چڑیا گھر میں مختلف اسٹالز اور سہولیات کی نیلامی، کڈنی ہل پارک کو اربن فاریسٹ بنانے،

کے ایم سی اسپورٹس کمپلیکس کشمیر روڈ پر چائنا گراؤنڈ میں کشمیر باغ قائم کرنے کی منظوری اور کراچی انسٹیٹیوٹ آف ہارٹ ڈیزیز میں لکویڈ آکسیجن گیس کی فراہمی اور عباسی شہید اسپتال میں ٹیلی فون ایکسچینج کی فراہمی و تنصیب اور میڈیکل آکسیجن گیس /نائیٹرو آکسائیڈ گیس کی فراہمی کی توثیق اور منظوری، کراچی انسٹیٹیوٹ آف ہارٹ ڈیزیز اور محکمہ وہیکل بلدیہ عظمیٰ کراچی سے متعلق امور کی منظوری شامل تھی،

اجلاس کے آغاز میں قائد ایوان اسلم شاہ آفریدی نے برسراقتدار اور حزب اختلاف ممبرا ن کی طرف سے ڈپٹی میئر سید ارشد حسن کو پہلی بار کونسل کی صدارت کرنے پر خوش آمدید کہا اور مبارکباد دی،

جبکہ مختلف اراکین کی طرف سے پیش کی گئی قراردادوں کے ذریعے سابق یوسی چیئرمین وقار احمد تنولی،ممبر کونسل زبیدہ اقبال کے والد، سابق یوسی ناظم رمضان سنگھار، ٹیسٹ کرکٹر عبدالقادر، صدارتی ایوارڈ یافتہ اداکار اور ہدایت کار عابد علی، اداکارہ ذہین طاہرہ کے انتقال پر رنج و غم کا اظہاراور پاک افغان سرحد پر جام شہادت پانے والے میجر عدیل شاہد اور دیگر شہداء کو خراج تحسین پیش کیا گیا،

اس کے علاوہ چیئرمین یوسی14- حاجی عبدالغفور کی صحت یابی کیلئے دعا کی گئی، اجلاس کی کارروائی کے دوران جن اراکین نے اظہار خیال کیا ان میں اسلم شاہ آفریدی، جنید مکاتی، حنیف میمن، عارف خان ایڈوکیٹ، کرم اللہ وقاصی اور دیگر شامل تھے۔