لاکھوں کشمیری انسانی المیے کا شکار ہیں، دنیا تماشائی بنی ہوئی ہے، سراج الحق

94
بنوں: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق اجتماع ارکان سے خطاب کررہے ہیں
بنوں: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق اجتماع ارکان سے خطاب کررہے ہیں

 

لاہور( نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کشمیر پاکستان کی نظریاتی ، معاشی اور جغرافیائی شہ رگ ہے ۔ کشمیر میں بھارتی فوج جو ظلم کر رہی ہے اس سے کرفیو کے خاتمے کے بعد وہاں پر قتل عام کا خطرہ ہے ۔کشمیر میں کرفیو کا 48 واں دن ہے لیکن اسلامی اور مغربی دنیا کی طرف سے کرفیو کے خاتمے کے لیے کوئی اقدام نہیں اٹھایا گیا ۔کشمیر میں عوام کے لیے سانس لینا مشکل ہوگیا ہے ، ایک بہت بڑا انسانی المیہ لاکھوں لوگوں کو گھیرے میں لے چکا ہے مگر عالمی برادری خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔ جب تک پاکستان خود کشمیر کے مسئلے
پر سنجید ہ نہیں ہوتا بیرونی دنیا اس مسئلے کو سنجید ہ نہیں لے گی ۔حکمران مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے مکمل غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔جماعت اسلامی تمام سیاسی جماعتوں کو پیغام دے رہی ہے کہ اپنے سیاسی اختلافات ایک طرف رکھ کر کشمیر کے لیے متحد ہوں۔ حکمرانوں نے قومی وحدت کو پارہ پارہ کر کے بھارت کے لیے ماحول سازگار بنایا ۔ حکمران بیرون ملک دورے میں جرأت کے ساتھ قوم کی ترجمانی کرتے ہوئے کشمیریوں اور ڈاکٹر عافیہ کے لیے آواز بلند کریں اور واپسی پر ڈاکٹر عافیہ کو پاکستان لائیں یہ پوری قوم کا مطالبہ ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بنوں میں جنوبی اضلاع کے اراکین کے اجتماع سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔ اجتماع سے امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان ، نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان پروفیسر محمد ابراہیم خان نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر نائب امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا مولانا تسلیم اقبال ، امیر جماعت اسلامی بنوں پروفیسر اجمل خان ، امیر جماعت اسلامی کوہاٹ عابد خان ، امیر جماعت اسلامی لکی مروت عزیز اللہ مروت ، امیر جماعت اسلامی کرک ظہور خٹک اور دیگر بھی موجود تھے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ٹرمپ کی ثالثی پر اعتماد نہیں ہے کیونکہ وزیر اعظم کے امریکا سے واپسی کے بعد ٹرمپ نے مودی سے ملاقات میں کہا کہ کشمیربھارت کا اندرونی معاملہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے کہا ہے کہ جو کشمیر جائے گاوہ غدار ہوگا، عمران خان صاحب وزیر اعظم سے مفتی اعظم نہ بنیں ۔ پاکستانی قوم کے دل کشمیریوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی 5 اگست سے کشمیر کے لیے احتجاج کررہی ہے باقی تمام جماعتیں خاموش ہیں ۔ 27 ستمبر کو مظفر آباد میں اور 6 اکتوبر کو لاہور میںکشمیر بچائو عوامی مارچ ہوگا ۔ سراج الحق نے کہا کہ پی پی پی ، ن لیگ اور پرویز مشرف کی حکومتوں کو عوام نے دیکھ لیا ہے جو سب کی سب ناکام ہوچکی ہیں ، سب کے چہر ے بے نقاب ہوچکے ہیں ، اب عوام کو صرف ایک روشنی نظر آرہی ہے جو جماعت اسلامی ہے۔