نیب مجھے ایک فیصد رقم دے کرباقی رکھ لے، خورشید شاہ

174

کراچی/ اسلام آباد (اسٹاف رپورٹر+نمائندہ جسارت) پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماسید خورشید شاہ نے نیب پر طنز کیاہے کہ نیب مجھے ایک فیصد رقم دے کرباقی رقم رکھ لے۔ اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مجھ پر 500 ارب روپے ڈالے ہیں، نیب نے جتنی رقم مجھ پرڈالی ہے اتنا تو ملکی بجٹ بھی نہیں۔ علاوہ ازیں نیب کی ٹیم آمدن سے زاید اثاثے بنانے کے الزام گرفتار پیپلز پارٹی کے رکن اسمبلیخورشید شاہ کو لے کر سکھرپہنچ گئی، انہیں پی آئی اے کی پرواز پی کے 631 کے ذریعے سکھر پہنچایا گیا۔خورشید شاہ کو مقررہ راستے کے بجائے متبادل راستے سے سخت سیکورٹی کے حصار میں نیب آفس منتقل کیا گیا۔پی پی پی کے کسی رہنما کو ان کے ائرپورٹ سے نیب آفس جانے کے راستے کا پتا بھی نہیں چل سکا۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ خورشید شاہ کو سہولیات دینے کے لیے نیب آفس سکھرمیںعلیحدہ لاکپ تیار کیا گیاہے جس میں ایئرکنڈیشنڈ اور اٹیچ باتھ بھی ہے۔ ذرائع کے مطابق انکی خرابی صحت کو دیکھتے ہوئے ایک ڈاکٹر اور خصوصی ایمبولینس کو بھی 24 گھنٹے نیب آفس میں موجود رکھا جائے گا، خورشید شاہ سے تفتیش کے لیے نیب سکھر کے سینئر افسران کی ٹیم تشکیل دی گئی ہے جو دوران تفتیش نیب افسران اسلام آباد کے سینئر افسران سے بھی مسلسل رابطے میں رہیں گے۔