سرمایہ کاروں کو نقابل عمل پالیسیوں سے خوفزدہ کیا جارہا ہے،فاروق شیخانی

25

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر)حیدرآباد چیمبر آف اسمال ٹریڈرز اینڈ اسمال انڈسٹری کے صدر محمد فاروق شیخانی نے کہا ہے کہ اب یہ بات روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ پاکستان اس وقت معاشی طور پر نازک دور سے گزر رہا ہے، اب تک معاشی بحران پر قابو پانے کے لیے وفاقی حکومت نے جو اقدام کیے ہیں وہ ناکامی سے دوچار نظر آتے ہیں۔ صنعتی مراکز میں انتہائی کساد بازاری دیکھنے میں آرہی ہے اور متعدد صنعتی یونٹ مطلوبہ سہولتوں کے فقدان کی وجہ سے بندش کی طرف گامزن ہیں ۔ جو اشیا غیر ممالک سے بڑی تعداد میں زرمبادلہ خرچ کر کے درآمد کی جارہی ہیں ان سے متعلق خام مال ملک میں 100 فیصد دستیاب ہے لیکن ملکی صنعت کی حوصلہ افزائی نہیں کی جارہی بلکہ سرمایہ کاروں کو مختلف ناقابل عمل پالیسیوں سے خوفزدہ کیا جارہا ہے جس سے ملکی سرمایہ کاری کم ہوتی جارہی ہے۔ اگر یہی صورتحال رہی تو بے روزگاری کا ایک نہ ختم ہونے والے طوفان کو روکنا کسی کی دسترس میں نہ رہے گا ایسی صورتحال نوجوانوں کا مستقبل تاریک ہوجائے گا ۔انہوں نے وزیر اعظم عمران خان، مشیر خزانہ، مشیر صنعت و تجارتاور چیئرمین ایف بی آرسے مطالبہ کیا ہے کہ مہنگے ڈالروں اور روز بروز بڑھتی کسٹم ڈیوٹیز کے عوض غیر ممالک سے مصنوعات کی درآمدات کا سلسلہ فوری بند کیا جائے،ملک میں موجود مطلوبہ 100فیصد خام مال سے ملکی مصنوعات تیار کرنے کے لیے مقامی صنعتوں کو فروغ دیا جائے اور انہیں زیادہ سے زیادہ مراعات ، ٹیکسوں اور ڈیوٹیز میں چھوٹ دی جائے تاکہ ایک طرف تو نوجوانوں کو آئندہ روزگار میسر آسکے اور دوسری جانب بجائے درآمدت کے پاکستان کی تیار کردہ مصنوعات کو برآمد کر کے اس سے وافر مقدار میں زرمبادلہ کمایا جاسکے۔
فاروق شیخانی