اقوام عالم دنیا میں امن کیلیے مسئلہ کشمیر حل کرائے، جمیل احمد خان

52

کراچی (نمائندہ جسارت) سابق سفیر، ماہر بین الاقوامی امور و سینئر تجزیہ کار جمیل احمد خان نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے آرٹیکل 370 اور 35A معطل ہونے کے ساتھ ہی شملہ اور لاہور معاہدے کی اہمیت ختم ہوچکی ہے، مسئلہ کشمیر اب پاکستان اور بھارت کے درمیان باہمی نہیں بلکہ عالمی سطح پر اٹھایا جانا چاہیے کیونکہ گزشتہ 71 سال سے مسئلہ کشمیر تعطل کا شکار ہونے کی وجہ سے کشمیری عوام غلامی کی زندگی گزار رہے ہیں۔ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جمیل احمد خان نے کہا کہ اقوام عالم دنیا میں امن کیلیے کشمیر کے مسئلے کے حل کیلیے کردار ادا کرے۔ بھارت کشمیر سے کرفیو ختم کرے اور میڈیا سے پابندیاں ہٹائی جائیں۔ اگر پاکستان اور بھارت کے درمیان جنگ چھڑگئی تو پوری دنیا اس سے متاثر ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان اور ڈونلڈ ٹرمپ کی ملاقات کے بعد نریندر مودی کے ردعمل میں شدت آئی تاہم نریندر مودی 28 سال پہلے آرٹیکل 370 اور 35A کو ختم کرنے کے عزم کا اعادہ کرچکے تھے اور اب اسرائیلی وزیراعظم نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ جیسے ہی میں منتخب ہوکر آئوں گا تو میں وادی اردن کو اسرائیل کے ساتھ ملالوں گا۔
جمیل احمد خان