نیب قوانین میں بڑے پیمانے پر تبدیلی ہوگی،تجاویز تیار ہیں،فروغ نسیم

47

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیرقانون فروغ نسیم نے کہا ہے کہ نیب قوانین میں بڑے پیمانے پر تبدیلی ہوگی‘ تجاویز تیار ہیں، نیب جس ملزم پر 50 کروڑ سے زائد کی کرپشن کا الزام عاید کرے گا اسے جیل میں صرف اور صرف ’ ’سی‘‘ کلاس ہی ملے گی۔اسلام آباد میں وفاقی وزیرقانون فروغ نسیم نے وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشر یات ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان کے ساتھ پریس کانفرنس کی،جس میں پنجاب کے وزیر قانون راجا بشارت اور خیبر پختونخوا کے وزیر قانون سلطان محمد خان بھی موجود تھے۔وفاقی وزیر قانون نے قوانین میں تبدیلیوں کا خاکہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ مفادات کے ٹکرائو سے متعلق اور لیگل ایڈ اینڈ جسٹس اتھارٹی آرڈیننس بھی لا رہے ہیں۔فروغ نسیم نے کہا کہ عمران خان کا وعدہ تھا کہ عوام کو سستا انصاف فراہم کیا جائے گا اور میں گارنٹی سے کہتا ہوں کہ عوام کے لیے 70 برس میں کبھی ایسے قوانین نہیں بنائے گئے۔ انہوں نے کہا کہ سمندر پار پاکستانیوں کی جائداد کو محفوظ بنانے کے لیے نیا قانون بنایا جا رہا ہے جب کہ بے نام اکائونٹس کے قانون میں وسل بلوور کے قانون کو شامل کر رہے ہیں۔وفاقی وزیر قانون کا کہنا تھا کہ دیوانی مقدمات کو ڈیڑھ برس میں نمٹایا جائے گا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ غلط تاثر دیا جارہا ہے کہ کرپشن کے ملزمان کو سہولیات دی جارہی ہیں۔اس سے متعلق فروغ نسیم نے بتایا کہ نیب جس ملزم پر 50 کروڑ سے زائد کی کرپشن کا الزام عاید کرے گا اسے جیل میں صرف اور صرف ’ ’سی‘‘ کلاس ہی ملے گی۔
فروغ نسیم