قائد اعظم ٹرافی ،حکام شائقین کو متوجہ کرنے میں ناکام

94

لاہور(جسارت نیوز )کراچی کے یوبی ایل کمپلکس میں ویک اینڈ کے باوجود بمشکل ایک سو سے کم تماشائی میچ دیکھنے آئے۔ گراؤنڈ میں کھلاڑیوں آفیشلز کے علاوہ چند صحافی موجود تھے حالانکہ میچ میں پاکستان ٹیم کے کپتان سرفراز احمد ،اسد شفیق ،عابد علی، امام الحق، فواد عالم اور حارث سہیل جیسے کھلاڑی ایکشن میں تھے۔فرسٹ کلاس کرکٹ بورنگ دکھائی دے رہی تھی۔ پی سی بی نے ٹورنامنٹ کو مقبول بنانے کیلئے طویل مہم چلائی، ٹیسٹ کرکٹرز کی شرکت کو ممکن بنایا لیکن کھلاڑیوں کی کشش شائقین کو گراؤنڈ میں لانے کا سبب نہ بن سکی۔کراچی میں کرکٹر انورعلی تماشائیوں میں گئے جبکہ قذافی اسٹیڈیم میں فاسٹ بولر محمد عباس نے تماشائیوں میں جاکر سیلفیاں بنائیں اور انہیں مشورہ دیا کہ وہ گراؤنڈ آکر فرسٹ کلاس میچ کی حوصلہ افزائی کریں۔پی سی بی نے ایک ارب روپے کی لاگت سے ڈومیسٹک کرکٹ کا ڈھانچہ پر کشش بنایا ہے۔ ڈومیسٹک کرکٹ کے نئے اسٹرکچر میں ڈپارٹمنٹس اور ریجنز کو ختم کرتے ہوئے 6 صوبائی ٹیمیں متعارف کرا دی گئی ہیں۔پی سی بی کا دعویٰ ہے کہ اب مقدار کم اور معیار زیادہ ہوگا۔ سندھ کے کپتان سرفراز احمد نے کہا کہ ملک بھر سے بہترین کرکٹرز کی ایونٹ میں شرکت سے مقابلے کی فضا بڑھے گی، کوکا بورا گیند کے استعمال سے بولرز کو فائدہ ہوگا۔یاد رہے کہ گذشتہ سال فرسٹ کلاس سیزن میں انگلش کمپنی کی گیند استعمال ہوئی تھی۔دوسری طرف لاہور میں بابراعظم کو ایکشن میں دیکھنے کا شوق مجاہد سلیم کو قذافی اسٹیڈیم لاہور کھینچ لایا ہے۔ مجاہد سلیم سمیت دیگر شائقینِ کرکٹ نے بھی اپنے اسٹار کھلاڑیوں کو فرسٹ کلاس کرکٹ میں ایکشن میں دیکھنے کے لیے گراؤنڈز کا رخ کیا ہے۔پاکستان کرکٹ بورڈ کھلاڑیوں اور شائقینِ کرکٹ کے درمیان فاصلے کم کرنے کے لیے قائداعظم ٹرافی کے پہلے راؤنڈ کے تمام وینیوز پر شائقین کے لیے داخلہ مفت رکھنے کا اعلان کرچکا ہے۔راولپنڈی سے تعلق رکھنے والے مجاہد سلیم کا کہنا ہے کہ انہوں نے محض بابر اعظم کی بیٹنگ دیکھنے کے لیے قذافی اسٹیڈیم کا رخ کیا ہے۔ مجاہد سلیم کا کہنا ہے کہ بابراعظم دنیا کے بہترین بیٹسمین ہیں اور وہ ان کے ساتھ تصویر بنانے کی خواہش رکھتے ہیں۔مجاہد سلیم کا کہنا ہے کہ پی سی بی کی جانب سے قائداعظم ٹرافی میں شائقینِ کرکٹ کے لیے گراؤنڈز کے دروازنے کھولنا خوش آئندعمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ قائداعظم ٹرافی قومی ڈومیسٹک کرکٹ کا پریمیئر ٹورنامنٹ ہے۔ قومی کرکٹ کوبڑے بڑے نام درحقیقت اسی ٹورنامنٹ سے ملتے ہیں۔قذافی اسٹیڈیم لاہور کے عبدالحفیظ کاردار انکلوژرکی نشستوں پر براجمان مجاہدسلیم اور ان کے دوستوں کا کہنا ہے کہ وہ قومی کھلاڑیوں کو ایکشن میں دیکھنے کے لیے قذافی اسٹیڈیم کا رخ کرتے رہیں گے۔اس موقع پر قومی کرکٹر شاہین آفریدی کی سرپرائز انٹری نے مجاہد سلیم اور ان کے دوستوں کو حیران کردیا۔ شاہین آفریدی کے انکلوژ ر میں آتے ہی سیلفیز بنانے کے لیے شائقینِ کرکٹ کا تانتا بندھ گیا۔اس موقع پر قومی کرکٹر شاہین آفریدی نے کہا کہ قائداعظم ٹرافی میں شائقینِ کرکٹ کو داخلے کی اجازت دینا خوش آئند عمل ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ ٹورنامنٹ کھلاڑیوں اور مداحوں دونوں کی توجہ کا مرکز بن چکا ہے۔اس موقع پر کالج کے طلبہ کی ایک بڑی تعداد نے بھی قذافی اسٹیڈیم کا رخ کیا۔ میڈیکل کے شعبے میں تعلیم حاصل کرنے والے جمشید علی سے جب یہ پوچھا گیا کہ وہ کالج جانے کی بجائے اسٹیڈیم کیوں آئے ہیں تو انہوں نے جواب دیا کہ کالج میں اساتذہ کی عدم حاضری کے باعث ہم نے قذافی اسٹیڈیم میں میچ دیکھنے کا فیصلہ کیا۔یو بی ایل اسپورٹس کمپلیکس کراچی میں آل راؤنڈر انور علی نے شائقینِ کرکٹ سے ملاقات کی۔پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے قائداعظم ٹرافی کے تمام میچز میں شائقین کرکٹ کا داخلہ مفت ہوگا۔