یورپی پارلیمنٹ منگل کو مسئلہ کشمیر پر بحث کرے گی، سردار مسعود

69

برسلز(صباح نیوز) صدر آزاد جموں وکشمیر سردار مسعود خان نے یورپین پارلیمنٹ کی طرف سے مسئلہ کشمیر پر بحث کو پارلیمنٹ کے ایجنڈا میں شامل کرنے کا خیرمقدم کرتے ہوئے اسے ایک اہم پیشرفت قرار دیاہے اور عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کو رکوانے اور کشمیریوں کے حق خودارادیت کو یقینی بنانے کے لیے ٹھوس عملی اقدامات اٹھائے جائیں۔ یورپین پارلیمنٹ میں فرینڈز آف کشمیر گروپ کے زیر اہتمام کشمیر کانفرنس سے خطاب
کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 17ستمبر کو سٹراسبرگ میں یورپین پارلیمنٹ کے اجلاس میں تنازعہ کشمیر پر کھلی بحث اس بات کا ثبوت ہے کہ مقبوضہ جموں وکشمیر میں تیزی سے بگڑتی ہوئی صورتحال پر یورپین برادری کو سخت تشویش ہے اور وہ اس مسئلہ کا پرامن سیاسی و سفارتی حل چاہتے ہیں۔ کانفرنس سے فرینڈز آف کشمیر گروپ کے شریک چیئرپرسن رچرڈ کوربیٹ ، یورپین پارلیمنٹ کی رکن انتھیا، رکن پارلیمنٹ شفیق محمد، جان ہو ہارتھ، رکن پارلیمنٹ ارینا وان ویز، تھریساگریفین، نوشینا مبارک اور راجہ نجابت حسین نے بھی خطاب کیا۔ صدر آزادکشمیر نے یورپین پارلیمنٹ کی خارجہ امور کمیٹی کی طرف سے اس ماہ کی 2تاریخ کو مسئلہ کشمیر کے حوالے سے بند کمرے میں اجلاس اور پارلیمنٹ کی انسانی حقوق کی ذیلی کمیٹی کی طرف سے اس سال فروری میں اقوام متحدہ کے حقوق انسانی کمیشن کی کشمیر کے بارے میں رپورٹ پر کھلی سماعت کرانے پر یورپین پارلیمنٹ کے ارکان کا کاشکریہ اداکیا۔