موجودہ حالات میں نوجوانوں کی عسکری تربیت ضروری ہے،مسعود احمد

58
پاکستان کوئز سوسائٹی کے تحت کوئز رننگ ٹرافی کے فاتح طلبہ کا مسعود احمد،حافظ نسیم الدین کے ساتھ گروپ فوٹو
پاکستان کوئز سوسائٹی کے تحت کوئز رننگ ٹرافی کے فاتح طلبہ کا مسعود احمد،حافظ نسیم الدین کے ساتھ گروپ فوٹو

کراچی (پ ر) 6 ستمبر ہماری قومی تاریخ میں ایک اہم سنگ میل ہے، جو یکجہتی، جرأت، بہادری اور ہمارے جانباز عسکری جوانوں سمیت عوام کی بے مثال قربانیوں کی علامت کے طور پر منایا جاتا ہے۔ قوموں کے دفاع میں نسل نو کے نمائندگان کلیدی اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔ پاکستان کے 63 فیصد نوجوان ایٹمی قوت سے بھی زیادہ طاقتور دفاعی ہتھیار ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ انہیں جدید علوم سے آراستہ کرنے کے ساتھ ساتھ عسکری تربیت بھی فراہم کی جائے۔ ان خیالات کا اظہار سابق ڈائریکٹر جنرل محتسب سندھ، صحافی و کوئزر مسعود احمد نے گزشتہ روز پاکستان کوئز سوسائٹی کے تحت یوم دفاع پاکستان کے موقع پر منعقدہ بین الکلیاتی و جامعاتی مقابلہ معلومات ’’ایم ایم عالم کوئز رننگ ٹرافی‘‘ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب سے حافظ نسیم الدین نے کہا کہ دفاع وطن کے جذبے کو 6 ستمبر تک ہی محدود نہیں رہنا چاہیے، اس جذبے کو ہمیں اپنی زندگی کے ہر شعبے میں شامل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کشمیر کے حوالے سے ایک مرتبہ پھر پاک بھارت جنگ متوقع ہے، لیکن ایم ایم عالم سے حسن صدیقی تک حب الوطنی کی مثالیں ہمارے سامنے موجود ہیں۔