مستقل نوعیت کاکام کرنے والے مستقل ورکر کہلائیں گے، رفیع اللہ ایڈووکیٹ

111

رپورٹ:قاضی سراج

PMTF۔ پاکستان مشین ٹول فیکٹری ڈیلی ویجز ورکرز ایکشن کمیٹی کے زیر اہتمام ادارہ سے ریٹائرڈ ہونے والے محنت کشوں کے اعزاز میں الوداعی تقریب ملیر کورٹس کے نزدیک شادی ہال میں 31 اگست کو منعقد ہوئی۔
رفیع اللہ ایڈووکیٹ سپریم کورٹ نے کہا کہ مختلف عدالتوں کے فیصلوں کے مطابق مستقل نوعیت پر کام کرنے والے مزدور مستقل کہلائیں گے۔ پاکستان مشین ٹول فیکٹری میں عرصہ دراز سے مستقل نوعیت پر کام کرنے والے مزدور بھی مستقل ہی کہلائیں گے۔ ڈیلی ویجز کہنا استحصال کی شکل ہے۔ آئین پاکستان میں استحصال کی ہر نوعیت ممنوع ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایکسپورٹ پروسیسنگ زون میں عدالتی فیصلوں کے نتیجہ میں لیبر قوانین کا اطلاق ہوتا ہے لیکن EPZ انتظامیہ عدالتی فیصلوں کو نہیں مانتی۔ انہوں نے کہا کہ PMTF ڈیلی ویجز ملازمین بھی مستقل ورکر ہیں۔ بس عمل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد و اتفاق سے جدوجہد کی جائے تو نتیجہ ضرور آتا ہے۔
پیپلز لیبر بیورو کے رہنما حبیب الدین جنیدی نے کہا کہ کمزور طبقہ کو حق دینا ریاست کی ذمہ داری ہے۔ PMTF کی CBA یونین ڈیلی ویجز کی جدوجہد کو درست سمت میں لے جائے۔ پیپلز لیبر بیورو کی کوشش ہے کہ لیبر قوانین پر عمل کروایا جائے۔
اس موقع پر پاکستان مشین ٹول فیکٹری ڈیلی ویجز ورکرز ایکشن کمیٹی کے چیئرمین عبدالقیوم حمایتی نے کہا کہ ڈیلی ویجز ملازمین نے دن رات محنت کرکے ادارے کو ترقی دی لیکن مزدوروں کو محنت کا صلہ نہیں ملتا۔ سرکاری ادارے میں ناانصافی ہونا بہت بڑا ظلم ہے۔ ہم نے داد رسی کے لیے حکمرانوں کو خطوط لکھے لیکن کوئی نتیجہ نہیں آیا۔
PMTF ایمپلائز یونین CBA کے چیئرمین غلام شبیر سومرو نے کہا کہ جمہوری حکومت ہو یا آمروں کی حکومت لیکن حکمرانوں کو توفیق نہیں ہوتی کہ وہ مزدوروں کی خدمت کریں۔ پیپلز پارٹی کے حکمران مزدور دوست ہونے کا نعرہ لگاتے ہیں لیکن پیپلز پارٹی کی حکومت نے بھی مشین ٹول فیکٹری کے ڈیلی ویجز ملازمین کے مسائل حل کرنے کے لیے کچھ نہیں کیا۔ جبکہ پاکستان اسٹیل کے ڈیلی ویجز ملازمین مستقل کیے گئے ہیں۔ PPP حکومت میں خورشید شاہ اور چودھری منظور نے بھی PMTF ڈیلی ویجز کے لیے کچھ نہیں کیا۔
مشین ٹول فیکٹری ملکی معیشت میں اہم کردار ادا کررہی ہے۔ حکمران PMTF کو ترقی دیں۔ انہوں نے کہا کہ ایکسپورٹ پروسیسنگ زون میں مزدور کو حقوق حاصل نہیں۔ مزدوروں کی تباہی کے ہم سب ذمہ دار ہیں۔ PMTF ڈیلی ویجز ملازمین کی جدوجہد میں بھرپور تعاون کریں گے۔
PMTF لبرل یونین کے جنرل سیکرٹری معراج احمد نے کہا کہ مشین ٹول فیکٹری کی انتظامیہ مسائل حل کرنے میں رکاوٹ ہے۔ 20 سال سے مزدور ڈیلی ویجز کی حیثیت سے کام کررہے ہیں لیکن حکمرانوں کو احساس تک نہیں۔ مزدور جدوجہد کرکے کامیابی حاصل کرسکتے ہیں۔
جھلکیاں
PMTF ڈیلی ویجز ملازمین کے پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک سے محمد اویس نے کیا۔ اس کے بعد محمد صالح مورائی نے نعتؐ پیش کی۔ اسٹیج سیکرٹری کے فرائض PMTF ایکشن کمیٹی کے رہنما علی اختر بلوچ نے انجام دیے۔ اس موقع پر مہمانوں کو سندھ کا روایتی تحفہ اجرک اور ٹوپی پہنائی گئی۔ جسارت کے قاضی سراج، حاجی دل محمد حمایتی (چیئرمین یونین کونسل جمعہ گوٹھ)، رفیع اللہ ایڈووکیٹ، حبیب الدین جنیدی، لیاقت علی خان مگسی، غلام مصطفی ہاشمانی، سامی میمن، ممبر صوبائی اسمبلی عبدالرزاق راجہ اور دیگر کو اجرک اور ٹوپی پہنائی گئی۔ تقریب میں سائٹ لیبر فورم کے رہنما جاوید احمد خان، PMTF، CBA کے جنرل سیکرٹری مشاہد اللہ، ڈاڈیکس کے رہنما علی محمد جمالی اور عبدالرزاق کاچھیلو، آدم جی انجینئرنگ کے رہنما نوید احمد خان، ارشاد اور ساجد علی، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے رہنما محمد یعقوب اور حاجی شاہد علی، ملیر کے سماجی کارکن سعید احمد قریشی، عباسی ہوٹل قائد آباد کے مالک ابراہیم امتیاز عباسی، سیکورٹی پیپر کے مزدور عبدالخالق رند، سماجی کارکن شیرو بنگش، ایڈووکیٹ نوید مسرت، اویس بخش، وقاص عرس، احسان اللہ ایڈووکیٹ، اسلم کیانی، سندھ پورھیت سماجی سنگت کے صدر یعقوب خاصخیلی اور دیگر نے شرکت کی۔
PMTF کے منیجنگ ڈائریکٹر انجینئر شوکت علی، PMTF کے ہیڈ ہیومن ریسورس مینجمنٹ ڈاکٹر منصور اصغر، PMTF کے آفیسرز ایسوسی ایشن (PEWA) کو دعوت نامہ ملنے کے باوجود بھی پروگرام میں شرکت نہیں کی۔ جبکہ NLF کراچی کے صدر عبدالسلام بیمار تھے اور ناصر منصور بیرون ملک دورے پر گئے ہوئے تھے۔
کراچی لیبر فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری عرفان شیخ بھی پروگرام میں شریک نہ ہوسکے۔ PMTF کے ریٹائرڈ معذور ورکر محمد ابراہیم کو حبیب الدین جنیدی نے اجرک اور ٹوپی کا تحفہ دیا۔ یوم پاکستان کے حوالے سے قومی ترانہ سب نے کھڑے ہو کر سنا۔