ایل این جی کیس:نیب نے کاروباری شخصیت اقبال زیڈ احمد کو گرفتار کرلیا

270

ایل این جی کیس میں قومی احتساب بیورو (نیب)کراچی کی ٹیم نے کاروباری شخصیت اقبال زیڈ احمد کو لاہور سے گرفتار کرلیا۔

ذرائع نے بتایا کہ اقبال زیڈ احمد کو الحمرا کے عقب میں واقع ان کے دفتر سے گرفتار کیا گیا ہے بتایا جارہا ہے ہے کہ اقبال زیڈ احمد کو عارضی طور پر نیب لاہور کے دفتر منتقل کیا گیا ہے اقبال زیڈ احمد کا راہداری ریمانڈ لے کر کراچی منتقل کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ ن لیگ کے سابق دور حکومت میں اس وقت کے وزیر پیٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے قطر کے ساتھ ایل این جی درآمد کرنے کا معاہدہ کیا تھا۔ان پر الزام ہے کہ انہوں نے بطور وزیرِ پیٹرولیم ایک ایل این جی ٹرمینل کا ٹھیکہ مبینہ طور پر من پسند کمپنی کو دیا۔

 نیب کا کہنا ہے کہ من پسند کمپنی کو ایل این جی ٹرمینل کا 15 برس کے لیے ٹھیکہ دینے سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچاشاہد خاقان عباسی کا موقف یہ رہا ہے کہ اس وقت ملک میں جاری توانائی کے بحران کو حل کرنے کے لیے یہ ٹھیکہ دینا ضروری تھا قبل ازیں نیب کراچی نے 19 دسمبر 2016 کوعلاقائی بورڈ اجلاس میں یہ کیس میرٹ پر بند کردیا تھا۔