مودی مقبوضہ کشمیر کے عوام کو مسلمان ہونے کی سزا دے رہے ہیں

28

اسلام آباد(وقائع نگارخصوصی) جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ صبح آزادی تک آزاد خطے کے عوام اور پاکستانی قوم مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کی پشتیبان رہے گی ،15لاکھ قابض بھارتی افواج اور آر ایس ایس کے غنڈے مقبوضہ کشمیر میں ظلم کی انتہا کررہے ہیں عالمی برادری آگے بڑھ کر اس کا نوٹس لے ،بھارت کے خلاف اقوا م متحدہ کے چپٹر 7کے مطابق کارروائی کی جائے ،بیس کیمپ اور حکومت پاکستان سفارتی،سیاسی سرگرمیوں کے تیز کرنے کے ساتھ ساتھ مقبوضہ کشمیر کے عوام کی عملی مدد بھی کریں ،نریندرمودی مقبوضہ کشمیر کے عوام کو مسلمان ہونے کی سزا دے رہے ہیں او آئی سی کے رکن ممالک بھارت کا سیاسی ،معاشی اور سفارتی بائیکاٹ کریں ،وہ اسلامی ممالک جو کشمیریوں کا ساتھ نہیں دے سکتے کم از کم مودی کو ایوارڈ دے کر کشمیریوں کے زخموں پر نمک پاشی نہ کریں ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے مرکزی ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر نائب امرا،نورالباری،ارشد ندیم ایڈووکیٹ،سیکرٹری جنرل راجا فاضل تبسم نے گفتگو کی۔جے آئی یوتھ اور شعبہ نشرواشاعت نے تازہ ترین حالات کے حوالے سے جائزہ رپورٹ رکھی۔اجلا س سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہاکہ جماعت اسلامی آخری حد تک جائے گی کشمیر کی آزادی نوشتہ دیوار ہے بھارت نے اس کو نہ پڑھا تو اس کا حشر برا ہو گا ، مودی اپنے دل سے خام خیالی نکال دے کہ وہ طاقت کی بنیاد پر کشمیریوں کو غلام رکھ سکے گا ،15لاکھ قابض فوج اور مسلسل 21 دن سے کرفیو کے باوجود ایک کشمیری بھی بھارت کو نہیں ملے گا جو حوصلہ ہا ر چکا ہو مودی کے اقدامات نے ان کشمیریوں کو بھی حریت پسند بنا دیا ہے جو بھارت نواز تھے اب مودی کو ایک کشمیری بھی نہیں ملے گا جوبھارت کا حمایتی ہو۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر نے آزاد ہونا البتہ اس میں ہمارا کیا کردار ہے یہ اہم سوال ہے جماعت اسلامی اول روز سے اپنا کردار ادا کررہی اور صبح آزادی تک کرتی رہے گی ۔