نئی دہلی میں ہوٹل مالکان کو کشمیریوں کو رہائش فراہم نہ کرنے کی ہدایت

62

نئی دہلی(اے پی پی)بھارتی حکومت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والی آئین کی دفعہ 370کے خاتمے کے بعد نئی دہلی میں ہوٹل مالکان سرکاری ہدایات پرکشمیریوں کوہوٹلوں میں جگہ نہیں دے رہے ہیں ۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق جامعہ ملیہ اسلامیہ میں زیر تعلیم کشمیر ی طالب علم ملک عابد نے سوشل میڈیا پر جاری اپنی ایک پوسٹ میں کہا ہے کہ ان کے ایک دوست کو نئی دہلی میں ہوٹل والوں نے سرکاری حکم نامہ دکھا کر کمرہ دینے سے صاف انکار کیا۔ملک عابدنے کہاکہ میرا دوست جامع نگر میں میرے ساتھ کرایے کے فلیٹ میں رہنے کے لیے آیا لیکن وہا ں پہلے ہی میرے ساتھ 2افراد مقیم تھے اور مزید افراد کے لیے کوئی گنجائش نہیں تھی ۔انہوں نے کہاکہ ہم ایک اور ہوٹل ’’اوتار ہوٹل‘‘گئے تو وہ بھی کشمیریوں کو کمرہ دینے سے ہچکچا رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہوٹل کے ملازمین نے بتایا کہ انہیںکشمیر، نیپال اور بنگلا دیش کے لوگوں کوجگہ نہ دینے کی ہدایت دی گئی ہے۔