جنرل باجوہ کو پینٹا گون کے دورے پر 21 توپوں کی سلامی

353
واشنگٹن: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کر رہے ہیں
واشنگٹن: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کر رہے ہیں

واشنگٹن (اے پی پی) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پینٹاگون کا دورہ کیا، چیئرمین جوائنٹ چیف آف اسٹاف جنرل جوزف ڈین فورڈ نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر آرمی چیف کو گارڈ آف آنر پیش کیا گیا اور 21 توپوں کی سلامی دی گئی۔ پاک فوج کے محکمہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی طرف سے جاری پریس ریلیز کے مطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے امریکا میں پینٹاگون کا دورہ کیا۔ امریکا کے چیئرمین جوائنٹ چیف آف اسٹاف جنرل جوزف ڈین فورڈ نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کو گارڈ آف آنر پیش کیا گیا اور 21 توپوں کی سلامی دی گئی۔ پریس ریلیز کے مطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی امریکی عسکری حکام سے علاقائی اور افغان عمل سمیت خطے کی سیکورٹی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔ آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کی امریکی چیف آرمی اسٹاف جنرل مارک اے ملی سے ملاقات میں گفتگو ہوئی جس میں دہشت گردی کیخلاف جنگ میں پاک فوج کی قربانیوں کو سراہا گیا۔ جنرل مارک اے ملی اور جنرل قمر باجوہ کے درمیان ملاقات میں دو طرفہ عسکری تعاون اور سیکورٹی صورتحال کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی امریکی قائم مقام وزیر دفاع سے گفتگو میں سیکورٹی اور دو طرفہ عسکری تعاون سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے امریکی قومی ہیروز کی یادگار کا دورہ کیا اور ہیروز کو خراج عقیدت پیش کیا۔ تقریب کے دوران دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے۔علاوہ ازیںپاک فوج کے سربراہ جنرل قمرجاید باجوہ نے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو ،سینیٹر لنزے گراہم اور جنرل ریٹائرڈ جیک کین الگ الگ ملاقاتیں کی ہیں جس میں دوطرفہ امور اور علاقائی سلامتی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کے ٹوئٹ کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو سے ملاقات کی جس میں دو طرفہ علاقائی سلامتی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔ ملاقات میں علاقائی سلامتی کی صورت حال اور افغان امن عمل پر بات چیت کی گئی اور افغان عوام کی سربراہی میں افغان امن عمل کی اہمیت پر زور دیا گیا۔ میجرجنرل آصف غفور نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ آرمی چیف قمر جاوید نے امریکی محکمہ خارجہ کا دورہ کیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ آرمی چیف نے ملاقات میں کہا کہ پاکستان احترام، اعتماد اور مشترکہ اقدار پر مشتمل باہمی تعلقات کو اہمیت دیتا ہے۔ ملاقات میں پاکستان اور امریکا کے تعلقات مزید بہتر بنانے پر بات ہوئی، 22 جولائی کو ہونے والے سربراہی اجلاس کا بھی جائزہ لیا گیا۔ قبل ازیں جنرل قمر جاوید باجوہ کی سینیٹر لنزے گراہم اور جنرل ریٹائرڈ جیک کین سے بھی ملاقات ہوئی۔اس موقع پر سینیٹر گراہم نے خطے کی بہتر ہوتی صورت حال میں پاکستان کے کردار کو خوب سراہا۔