عمران خان جیلوں کو سیاسی قیدیوں سے بھرنا چاہتے ہیں،شہباز شریف

158

اسلام آباد (آن لائن) قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ عمران خان سیاسی قیدیوں سے جیلیں بھرنا چاہتے ہیں‘ جمہوریت کی کشتی ڈانواں ڈول ہے‘ ڈوبتی کشتی کو منجدھار سے نکالنے کے لیے مثالی اتحاد ناگزیر ہے‘ ملک کی معیشت تباہ ہوچکی اور وزیراعظم کی معاشی ٹیم مذاق بن گئی ہے‘ بیروزگاری انتہا کو چھو رہی ہے‘ فیکٹریوں کو تالے لگ گئے‘ دکانوں سے لوگوں کو نکالا جا رہا ہے‘ مزدور اپنے مالکان کی منتیں کرنے پر مجبور ہیں‘ عام آدمی پر زندگی تنگ ہوچکی ہے‘ روٹی 15روپے اور نان 20 روپے تک پہنچ گیا ہے‘عمران خان کا امریکا جاکر جیلوں سے ائرکنڈیشن نکلوانے باتیں کرنا دیار غیر میں بدترین جگ ہنسائی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن اراکین کے اعزاز میں دیے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس میں 56 سینیٹرز نے شرکت کی جبکہ اپوزیشن لیڈر شہبازشریف سمیت 7 ارکان قومی اسمبلی بھی شریک ہوئے۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ قائد اعظم ایک عظیم لیڈر تھے جن کی کوششوں سے پاکستان معرض وجود میں آیا‘ آج 71 سال بعد بھی قوم اپنی منزل کی تلاش میں ہے‘ چین سمیت ایسے ممالک جنہوں نے پاکستان کے بعد آزادی حاصل کی آج وہ ممالک ہم سے کوسوں میل آگے جاچکے ہیں۔ شہباز شریف نے تحریک عدم اعتماد کامیاب بنانے کے لیے اپوزیشن کو متحد رہنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کے پاس نمبر پورے نہیں ان کی تحریک ناکام ہوگی۔ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ وزیر اعظم امریکا میں جاکر کہتے ہیں کہ پاکستانی جیلوں سے ائرکنڈیشن نکلوادوں گا‘ دیار غیر میں ایسی گفتگو کرنا بدترین جگ ہنسائی ہے۔