ملک میں غربت ،مہنگائی اور بے روزگاری بڑھتی جا رہی ہے

71

لاہور (نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ حکمرانوں کی پالیسیوں کے باعث آج پاکستان کی بیشتر آبادی خط غربت سے نیچے زندگی بسر کر رہی ہے۔ مہنگائی،بے روزگاری اور غربت کے خاتمے کے لیے حکومت نے بڑے بڑے دعوے کیے مگر افسوس ایک بھی پورا نہیں ہوا۔ ملک میں غربت ،مہنگائی اور بے روزگاری بڑھتی جا رہی ہے۔ غریب اور مزدور طبقہ مہنگائی کی چکی میں پس رہا ہے۔تشویش ناک امر یہ ہے کہ مہنگائی،بے روزگاری اور غیر یقینی مستقبل کی وجہ سے معاشرے میں خود کشیوں کے رجحان میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے۔ موجودہ حکومت بھی سابقہ حکومتوں کی طرح عوام کے مسائل حل کرنے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔ ان خیالات کا اظہار ا نہوں نے گزشتہ روز منصورہ میں مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کے پاس ڈگریاں تو موجود ہیں لیکن ان کے لیے حکومت کے پاس روزگار نہیں۔ایک کروڑ نوکریاں دینے کے سب دعوے ماضی کا حصہ بن چکے ہیں اور اس حوالے سے کسی قسم کا کوئی اقدام نہیں کیا جا رہا ۔ قومی اداروں کو کرپشن اور بدانتظامی نے تباہ و بربادہے۔ نجکاری کے نام پر قومی اداروں کی بندر بانٹ اور لوگوں کو بے روزگار کیا جانا تشویشناک ہے۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی ملک میں ایسا نظام چاہتی ہے جس میں یتیموں ،بیوائوں، ضرورت مندوں اور بے سہارا لوگوں کی کفالت حکومت خودکرے۔عوام کیلیے تعلیم کا حصول آسان ہو اور مظلوموں کو انصاف ان کی دہلیز پر ملے۔ معیشت اور بنکاری کا نظام سود سے پاک ہو۔ خدمت خلق کرنا اور ملک کو حقیقی معنوں میں مدینہ منورہ جیسی اسلامی فلاحی ریاست بنانا ہمارایجنڈا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے مزیدکہاکہ بدقسمتی سے کبھی آمریت نے اس ملک کو سب سے پہلے پاکستان کانعرہ لگاکر ناقابل تلافی نقصان پہنچایا تو کبھی برسراقتدار آنے والی سیاسی جماعتوں نے قومی خزانے کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ کر اپنی تجوریاں بھریں۔وقت کاتقاضا ہے کہ ملک وقوم کی تقدیر کے ساتھ کھیلنے کاسلسلہ بند ہواور لوٹ مار کرنے والوں کا کڑااحتساب کیا جائے۔