عمران خان سلیکٹیڈ ہیں اسی لیے عسکری قیادت کو امریکا لے جانا پڑا، مریم نواز

71

 

لاہور(نمائندہ جسارت)پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے ایک بار پھر ڈیل کی خبروں کو مسترد کردیا۔ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ دنیا کو پتا ہے عمران خان سلیکٹڈ ہیں اسی لیے انہیں اپنے ساتھ عسکری قیادت کو بھی امریکا لے جانا پڑا۔میڈیا سے گفتگو میں مریم نواز کا کہنا تھا کہ ڈیل کے لوازمات کو عمران خان جیسا سلیکٹڈ تو پورا کر سکتا ہے لیکن میاں صاحب اور مسلم لیگ (ن) جمہوریت کی پیٹھ میں چْھرا نہیں گھونپ سکتے اور نہ ہی عوام کے اعتماد کو ٹھیس پہنچاسکتے ہیں۔ عمران خان خود اکیلے ملک کی نمائندگی نہیں کرسکتے وہ کسی کو این آر او کیا دیں گے؟ ان میں اتنی اخلاقی جرات ہی نہیں ہے۔مریم نواز کا کہنا تھا
کہ ڈیل اور ڈھیل پر نہ کسی میں اتنی جرات ہے کہ مریم سے رابطہ کرے ،نہ رابطے کا جواب دوں گی۔ اگر ڈیل کی ہوتی تو نوازشریف جیل میں نہ ہوتے، مجھے میسج آتے رہتے ہیں کہ کیا ڈیل کے لیے لوازمات عمران خان سلیکٹڈ وزیر اعظم پورا کر سکتے ہیں۔ میرا جواب ہے کہ عمران خان میں اتنی اخلاقی جرات ہی نہیں کہ وہ کسی کو این آر او دے سکیں وہ تو ملک کی نمائندگی بھی اکیلے نہیں کرسکتے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان امریکا گئے بتائیں کس کو ساتھ لے کر گئے؟ کیا وہ خود اکیلے ملک کی نمائندگی کر سکتے ہیں؟ وہ جہاں جاتے ہیں کسی کو ساتھ لے کر جاتے ہیں۔ انہیں خود پر اعتماد نہیں کیونکہ وہ منتخب ہو کر نہیں آئے، دنیا جانتی ہے وہ سلیکٹڈ ہیں۔ میں اچھی طرح سمجھتی ہوں کہ ایک گروپ ہر دور میں جمہوری حکومتوں کے خلاف چلتا ہے۔ حکومت اور سسٹم الگ چیزیں ہیں یہ حکومت چلتی نظر نہیں آتی۔نائب صدر (ن) لیگ نے کہا کہ آج فرانزک ٹیم نے خود بتا دیا کہ جج کی ویڈیو سچی ہے، عدلیہ سے گزارش کرتی ہوں کہ اس معاملے کا نوٹس لیں ویڈیو اصلی ہونے میں اب کوئی شک نہیں۔ نوازشریف بے گناہ ہیں اور پابند سلاسل ہیں ان کے خلاف فیصلے نے عدلیہ پر سوالیہ نشان لگایا ہے، ججز آگے بڑھ کر عدلیہ پر اعتماد کو بڑھائیں۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ فیصل آباد کی انتظامیہ مریم نواز کی ریلی سے خوف زدہ ہے، اس لیے ریلی کی اجازت نہیں دی گئی لیکن ریلی فیصل آباد سے ہی شروع ہوگی