ارشد ملک کی وڈیو درست قرار۔ رپورٹ نہیں جاری کی، فارنزک ایجنسی

159

 

لاہور/ اسلام آباد (صباح نیوز) نجی ٹی وی رپورٹ کے مطابق پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی نے احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک اور (ن)لیگی کارکن ناصر بٹ کے درمیان ہونے والی گفتگوکی آڈیو اور وڈیو کو درست قرار دے دیا۔ پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی کی ابتدائی رپورٹ ایف آئی اے کو موصول ہو گئی ۔ فارنزک میں تصاویر اور آواز کا تعین بھی کر لیا گیا ۔ ایف آئی اے نے رپورٹ کو بھی تفتیش کا حصہ بنا دیا گیا ۔ نجی ٹی وی کے مطابق ایف آئی اے نے مریم نواز شریف کی جانب سے پریس کانفرنس میں پیش کی گئی وڈیو کو فارنزک ٹیسٹ کے لیے پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی بھجوایا گیا تھا اور فارنزک ٹیسٹ میں یہ بات ثابت ہو گئی ہے کہ وڈیو کی کوئی ایڈیٹنگ نہیں کی گئی اور نہ ہی جس شخص کی آواز اور وڈیو ہے وہ تبدیل ہے۔ جس
شخص کی وڈیو ہے اسی شخص کی آواز ہے ۔ پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی کے حکام نے ابتدائی رپورٹ ایف آئی اے کو بھجوا دی ہے اور کہا ہے کہ اگر ایف آئی اے کو مزید سوالات کے جواب درکار ہیں تو اس میں کچھ وقت لگے گا۔ ایف آئی اے نے پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی کی رپورٹ کو تفتیش کا حصہ بنا دیا ہے۔ دوسری جانب پنجاب فارنزک سائنس ایجنسی نے جج ارشد ملک کی وڈیو سے متعلق رپورٹ کی تردید کرتے ہوئے واضح کیا کہ مبینہ وڈیوکے حوالے سے اب تک کوئی تصدیق نہیں کی گئی ۔ ڈی جی فارنزک سائنس ایجنسی ڈاکٹراشرف طاہر نے اپنے بیان میں کہا کہ پنجاب حکومت نے پنجاب فرانزک لیب ایجنسی سے رابطہ کیا تھا تاہم ابھی تک ہمیں کوئی وڈیو موصول نہیں ہوئی ہے۔ڈی جی فارنزک سائنس ایجنسی نے واضح کیا کہ ادارے کی جانب سے مبینہ وڈیو کے حوا لے سے اب تک کوئی تصدیق نہیں کی گئی ۔ادھر ترجمان وزیراعلیٰ پنجاب شہباز گل کا کہنا ہے کہ پنجاب فرانزک لیب ایجنسی سے رابطہ کیا گیا ہے۔انہوں نے وڈیو اسکینڈل کے حوالے سے کسی قسم کی کوئی رپورٹ جاری کی نہ ہی پنجاب فرانزک لیب کو اس پر ابھی تک کوئی مواد موصول ہوا ۔
فرانزک لیب