دفاعی پیدوار کیلئے نجی شراکت داری ضروری ہے،آرمی چیف

88

راولپنڈی ( آن لائن )دفاعی پیداوار کے لیے نجی شراکت داری ضروری ہے۔آرمی چیف۔تفصیلات کے مطابق آرمی آڈیٹوریم میں’’دفاعی پیداوار،سلامتی بذریعہ خود کفالت‘‘ کے موضوع پردو روز ہ سیمینار کا انعقاد ہوا۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ دفاعی صنعت میں شراکت داری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ دفاعی صنعت میں خودانحصاری کونجی وسرکاری شراکت سے مضبوط بنایا جاسکتا ہے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق سیمینار میں تنظیمی اور ادارہ جاتی مشکلات کی نشاندہی اور حل کی تجاویز پیش کی گئیں۔ آرمی چیف نے قومی سلامتی کے اہم معاملے پر سیمینار کے شرکاء سے اظہار تشکرکیا۔سیمینار میں وفاقی وزراء زبیدہ جلال اورفواد چودھری نے دفاعی پیداواری صنعت کی ترقی کیلیے تجاویز پیش کیں۔سیمینار میں دفاعی پیداوار میں اضافے کیلیے نجی اور سرکاری شعبے کے مابین اشتراک پر زور دیا گیا۔ سیمینار میں وزیراعظم کی زیرنگرانی دفاعی پیداوار ٹاسک فورس کے قیام کی تجویز پیش کی گئی۔ سیمینارمیں نئی پالیسی کے لیے حکومت کیلیے سفارشات تیارکی گئیں۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دفاعی صنعت میں شراکت داری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ دفاعی صنعت میں خودانحصاری کوشراکت سے مضبوط بنایا جاسکتا ہے۔ دفاعی صنعت کو خود کفیل بنانیکیلیے نجی شعبے کی شراکت بڑھانے کی ضرورت ہے اور ہماری دفاعی صنعت کو مکمل طور پر ایک مربوط نجی شعبہ درکار ہے۔