ڈاکٹر رتھ فاؤ سول اسپتال میںکتے کے کاٹے کی ویکسین ختم

71

کراچی (اسٹاف رپورٹر) صوبے کے سب سے بڑے سرکاری اسپتال، ڈاکٹر رتھ فاؤ سول اسپتال کراچی میں کتے کے کاٹے کے علاج کی ویکسین ختم ہو گئی ہے۔ جمعہ کو کتے کے کاٹے سے متاثرہ درجنوں افراد کو سول اسپتال سے واپس بھیج دیا گیا۔ اس موقع پر مریض اے ایم ایس او پی ڈی ڈاکٹر ظہور احمد شیخ کے دفتر کے باہر جمع ہو گئے اور احتجاج کیا جس پر اے ایم ایس نے مریضوں کو اسپتال کے سربراہ کے دفتر کے باہر بھیج دیا۔ مریضوں کا کہنا تھا کہ ایک طرف حکومت کتوں کے خاتمے کے لیے اقدامات نہیں کر رہی تو دوسری طرف اب علاج کی ویکسین بھی ختم ہوگئی ہے وہ علاج کے لیے کہاں جائیں۔ واضح رہے کہ رواں سال اب تک کتے کے کاٹے سے12 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ ہزاروں کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔ دو روز قبل بھی جناح اسپتال میں سانگھڑ کی رہائشی پچاس سالہ خاتون کتے کے کاٹنے کے باعث انتقال کر گئیں۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ کتے کے کاٹے کا علاج کراچی میں صرف جناح اسپتال، سول اسپتال اور انڈس اسپتال میں ہو رہا ہے۔ ایسے میں سب سے بڑے سرکاری اسپتال میں ویکسین ختم ہو جانا اسپتال انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ ماہرین کے مطابق کتے کے کاٹے کے علاج کی ویکسین نہ لگائی جائے اور مرض سرائیت کر جائے تو اس سے100 فی صد موت واقع ہو جاتی ہے۔