سالانہ ساڑھے 8 کروڑ ڈالرکے پنکھے برآمد ہو رہے ہیں

66

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان کی پنکھا سازی کی صنعت ملکی ضروریات کو پورا کرنے کے علاوہ اس وقت ہرسال ساڑھے 8 کروڑ ڈالرسے زائد کے پنکھے برآمد کر رہی ہے ‘تاہم اگر فین انڈسٹری کو مطلوبہ سہولیات فراہم کردی جائیں اور توانائی کی مسلسل سپلائی جاری رکھی جائے تو یہ صنعت اپنی برآمدات باسانی 20کروڑ ڈالر سالانہ تک پہنچا سکتی ہے۔آل پاکستان الیکٹرک فین مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کے ترجمان نے بتایا کہ پاکستان سالانہ 28 لاکھ کے قریب پنکھے برآمد کر رہا ہے اور اس کی ماہر افرادی قوت و معیار نے بھارت اور چین کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے جس کے باعث پاکستان کو دونوں ممالک سے زیادہ عالمی آرڈرز موصول ہو رہے ہیں لیکن توانائی کے فقدان اور بعض دیگر وجوہات کے باعث ان آرڈرز کی تکمیل میں بعض مشکلات کا سامنا کرناپڑ رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت دنیا بھر میں پنکھوں کی برآمد پانچ ارب ڈالر کے قریب ہے جبکہ مختلف ممالک میں پاکستانی پنکھوں کو انتہا ئی پسند یدگی کی نظر سے دیکھا جاتا ہے۔
سندھ میں سی این جی اسٹیشنزبند
کراچی(اسٹاف رپورٹر) سوئی سدرن کمپنی کی جانب سے سندھ بھر کے سی این جی اسٹیشنز کو گیس کی فراہمی جمعہ کے روز معطل رہے گی۔ترجمان ایس ایس جی سی کے مطابق لوڈ مینجمنٹ پلان کے تحت صوبے بھر کے سی این جی اسٹیشنزکو جمعہ کی صبح آٹھ بجے سے ہفتہ صبح آٹھ بجے تک کیلئے گیس فراہمی معطل رکھنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں،صوبے میں پیر اور بدھ کے روز بھی سی این جی اسٹیشنز کو گیس فراہمی معطل رہی تھی۔