گیس نرخ میں اضافے سے صنعتیں بند،بیروزگاری بڑھ رہی ہے،حافظ طاہر مجید

118

حیدرآباد(اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی حیدرآباد حافظ طاہر مجید نے کہا ہے کہ گیس کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ظلم و زیادتی ہے ۔ حکومت کا کمرشل اور صنعتی صارفین پر گیس کی قیمتوں میں اطلاق سے وہاں تیار مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ہو گا جس کا براہ راست عام آدمی شکار ہو گا اور عوام پر پہلے ہی روزمرہ ضروریاتِ اشیاء کی قیمتیں بڑھنے سے اُن کی کمر ٹوٹ چکی ہے ، عام شہری کا جینا دشوار ہو گیا ہے ۔ گیس نہ ہونے سے ملوں ، فیکٹریوں میں شفٹیں بند کر دی گئی ہیں ، جس سے بیروزگاری میں اضافہ ہو رہا ہے۔ بجلی کی فی یونٹ پر بھی اضافہ کرکے بجلی مزید مہنگی کردی گئی ہے معیشت کے تینوں محکمے ایف بی آر،وزارت خزانہ اور ،اسٹیٹ بینک آئی ایم ایف کے ایجنٹوں کے پاس ہیں۔ہر شے کی قیمتیں دن رات کے حساب سے بڑھائی جارہی ہیں،مہنگائی کا جن بے قابو کیا
جارہا ہے۔بچوں کے دودھ،خوردنی آئل پر ٹیکس لگادیے ہیں، چینی سمیت 50 سے زاید اشیا کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا ہے،پی ٹی آئی کی حکومت نے 10ماہ میں اپنے ہاتھوں وہ بدنامی کمائی ہے جو پی پی اور ن لیگ نے 30برس کے اقتدار میں بھی حاصل نہیںکی تھی،ڈالر ملکی تاریخ میں بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے جس سے ملک پر 15 سو ارب روپے کا قرضہ مزید چڑھ گیا ہے ۔حکومت فوری طور پر گیس اور دیگر اشیاء کی قیمتوں میں کمی کرے ۔
حافظ طاہر مجید